Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / مرکز کی پالیسیوں کی G20 وزرائے لیبر کانفرنس میں ستائش

مرکز کی پالیسیوں کی G20 وزرائے لیبر کانفرنس میں ستائش

کئی ممالک ہندوستان کے ساتھ اشتراک کے خواہاں ‘ مرکزی وزیر دتاتریہ کا ادعا
حیدرآباد 21 مئی ( پی ٹی آئی ) مرکزی وزارت لیبر و روزگار ورکنگ کلاس طبقہ کو ائمپلائمنٹ سکیوریٹی فراہم کرنے ‘ سماجی و اجرت کی سکیوریٹی فراہم کرنے کی سمت پیشرفت کر رہی ہے ۔ مرکزی وزیر محنت و روزگار بنڈارو دتاتریہ نے یہ بات بتائی ۔ انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ بچہ مزدوری کا خاتمہ ‘ پردھان منتری روزگار پروتساہن یوجنا ‘ منظم شعبہ میں کام کرنے والی خواتین کو 26 دن کی میٹرنٹی رخصت فراہم کرنا مرکزی حکومت کی بڑی کامیابیوں میں سے ایک ہے ۔ دتاتریہ نے 18-19 مئی کو جرمنی میں منعقدہ G20 لیبر و روزگار وزرا کی کانفرنس میں شرکت کی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ اس اجلاس میں محنت اور روزگار سے متعلق نریندر مودی حکومت کی پالیسیوں کی ستائش کی گئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی وزارت کی جانب سے کئی پروگرامس کا آغاز کیا گیا ہے اور جرمنی میں منعقدہ کانفرنس کے رکن ممالک کیلئے یہ رہنمائی کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس کانفرنس کے موقع پر برطانیہ ‘ ارجنٹینا ‘ روس ‘ سعودی عرب کے وزرائے محنت کے ساتھ بھی ان کی باہمی ملاقات ہوئی ہے اور کئی مسائل پر خاص طور پر غیر منظم شعبہ کے ورکرس کے تعلق سے بات چیت کی گئی ہے ۔ دتاتریہ نے بتایا کہ انہوں نے جرمنی کے وزیر لیبر کے ساتھ بھی بات چیت کی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سیکھنے ‘ کمانے اور روزگار کے مقصد کے ساتھ نوجوانوں کو تربیت فراہم کرنے میں جرمنی نے ہندوستان کے ساتھ اشتراک میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے ۔ کئی دوسرے ممالک نے بھی ہندوستان کے ساتھ اس معاملہ میں یادداشت مفاہمت کرنے میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کچھ ممالک نے ہندوستانی ای پی ایف او سرمایہ کاریوں کے تعلق سے بھی دلچسپی کا اظہار کیا ہے ۔ دتاتریہ نے کہا کہ G20 ممالک نے 2030 تک مقررہ نشانوں کی تکمیل پر توجہ دینے کا فیصلہ کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈیجیٹل دنیا کے دور میں مہارتوں کے فروغ کو انتہائی اہمیت حاصل ہے ۔ حکومت تلنگانہ میں اور خاص طور پر ورنگل ‘ ظہیر آباد ‘ راما گنڈم اور حیدرآباد کے اطراف کے علاقوں میں ڈیجیٹائزیشن کے عمل کو وسعت دینے کا منصوبہ رکھتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT