Tuesday , December 12 2017
Home / ہندوستان / مرہٹواڑہ میں شری ہری انئیے کے داخلے پر پابندی شیوسینا ایم پی چندرا کانت کھارے کا انتباہ

مرہٹواڑہ میں شری ہری انئیے کے داخلے پر پابندی شیوسینا ایم پی چندرا کانت کھارے کا انتباہ

ممبئی ۔ 23 ۔ مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی کی حلیف شیوسینا نے آج کہا کہ علاقہ مرہٹواڑہ میں شری ہری انئیے (Aney) کو داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جاسکی جبکہ علحدہ ریاست مرہٹواڑہ کی حمایت پر تنازعہ پیدا ہوجانے کے بعد انہوں نے کل ایڈوکیٹ جنرل کی حیثیت سے استعفیٰ دیدیا تھا ۔ شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ چندرا کانت کھارے نے بتایا کہ انئیے کو اورنگ آباد میں قدم رکھنے نہیں دیا جائے گا ۔ شری ہری انئیے جو کہ ہائیکورٹ میں بنچ میں وکالت کیلئے آئے ہیں، اورنگ آباد میں قدم رکھنے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی اور ان کے خلاف شیوسینا کا احتجاج جاری رہے گا جنہوں نے شیواجی کے خواب متحدہ مہاراشٹرا کے ساتھ غداری کی ہے ۔ مہاراشٹرا میں چھوٹی ریاستوں کی تشکیل پر آر ایس ایس لیڈر ایم جی ویدیہ کے نقطہ نظر کا تذکرہ کرتے ہوئے مسٹر کھارے نے کہا کہ ویدیہ اب عمر رسیدہ ہوگئے ہیں اور خیالات بھی فرسودہ ہوگئے ہیں۔ دریں اثناء شیوسینا کے اس مطالبہ پر کہ سابق ایڈوکیٹ جنرل کو غداری کیس میں ماخوذ کیا جائے ۔ شری ہری انئیے نے ردعمل ظاہر کرتے ہوئے بدبختانہ امر  یہ ہے کہ شیوسینا کو ایک بہترین وکیل کی ضرورت ہے، تاکہ انہیں یہ سمجھایا جائے کہ چھوٹی ریاستوں کی تشکیل کا مطالبہ ملک سے غداری نہیں ہوتا بلکہ یہ ایک دستوری عمل ہے کیونکہ میں ملک کی بربادی کی بات نہیں کی بلکہ علحدہ ریاست کا مطالبہ کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT