Wednesday , November 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مریضوں کی جان سے کھلواڑ کرنے والوں کا ریاکٹ بے نقاب

مریضوں کی جان سے کھلواڑ کرنے والوں کا ریاکٹ بے نقاب

درندہ صفت ڈاکٹرس سلاخوں کے پیچھے، غیر ضروری پیٹ کے آپریشن کے خلاف کارروائی

کورٹلہ 20 / اپریل (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز )ریاستی سطح پر ہلچل پیدا کرنے والے غیر قانونی و غیر ضروری پیٹ کے آپریشن  کے معاملہ کو پولیس کے عہدیداروں نے کامیابی کے ساتھ حل کرتے ہوئے خانگی ڈاکٹر اور اُ س کا تعاون کرنے والے آریم پی اور پی ایم پی ڈاکٹر کو جیل کی سلاخوں کے پیچھے ڈال دیا ۔پیٹ کے درد کی شکایت کرتے ہوئے خانگی دواخانوں سے رجوع ہونے والے مریضوں کا غیر ضروری طورپر پیٹ کے آپریشن (APPENDEX)کرنے والوں کو پولیس نے اپنے تحویل میں لے لیا۔اس معاملہ کی پولیس کی جانب سے اقدامات شروع کئے جانے پر خانگی ڈاکٹرس جو غیر ضروری طورپر مریضوں کے پیٹ کے آپریشن (APPENDEX)کرتے ہوئے دولت لوٹ رہے تھے پولیس کی جانب سے کی جانے والی اس کاروائی سے خانگی ڈاکٹروں میں کھلبلی مچ گئی ہے کئی خانگی ڈاکٹرس اپنے دواخانوں کو تالا لگاکر فرار ہوچکے ہیں۔کتھلاپور کی خاتون کی جانب سے کی گئی شکایت پر کتھلاپور کے پولیس نے کیس درج کرتے ہوئے کورٹلہ ‘جگتیال کے حدود میں واقع خانگی دواخانوں میں تقریبا 557غیر ضروری پیٹ کے آپریشن کے الزام میں ڈاکٹر تاٹی پامولا سریش کمار اور اس معاملہ میں تعاون کرنے والے تانڈریال کے آریم پی ڈاکٹر جی گنیش کو راجا شیکھر راجو سرکل انسپکٹر آف پولیس کورٹلہ ‘سب انسپکٹر آف پولیس کتھلاپور نرنجن کمار حراست میں لیکر پوچھ تاچھ کررہی ہے ۔25دن قبل کتھلاپور منڈل کے گھمبیر پور ‘سرکنڈہ ‘بومینا ‘امباری پیٹ ‘کلی کوٹا ‘کتھلاپور ‘اسکول کے طلباء کا غیر ضروری طورپر پیٹ کا آپریشن (APPENDEX)منظر عام پر آیا ہے۔  اس معاملہ پر ریاستی انسانی حقو ق کمیشن نے سمیٹو کیس درج کرتے ہوئے تحقیقات کرتے ہوئے اپنی رپورٹ پیش کی اور تحقیقات کرتے ہوئے رپورٹ پیش کرنے کی میڈیکل کونسل ‘پولیس ‘ریونیو عہدیداروں نے ایچ آر پی کو احکامات جاری کئے۔چیرمین میڈیکل کونسل رویندر کے زیر قیادت مختلف ٹیموں کے ممبروں نے کتھلاپور ‘کورٹلہ منڈلوں کا دورہ کرتے ہوئے تحقیقات کئے اس کے علاوہ پولیس ‘ریونیو ‘انٹلیجنس ‘میڈیکل اینڈ ہیلت ڈپارٹمنٹ، ایجوکیشن ڈپارٹمنٹ ‘ ای سی ڈیس شاخوں کے عہدیداروں کے ملازمین نے کتھلاپور منڈل کے مختلف دیہاتوں کا دورہ کرتے ہوئے عوام سے معلومات حاصل کی۔اس معاملہ پر سرکاری مشنری کی جانب سے مختلف زاویوں سے تحقیقات کرانے پر کئی معاملات منظر عام پر آئے ہیں ۔

APPENDEX کے علاوہ کئی کثیر تعداد میں خواتین کے حمل کی تھیلیاں نکالے جانے آپریشن کرنے کے واقعات منظر عام پر آئے ہیں ۔اس ضمن میں کتھلاپور منڈل کے تانڈریال کے متاثرین کی جانب سے کی گئی شکایت پر پولیس کیس درج کرتے ہوئے ایک ڈاکٹر او پی ایم سی او کو اپنی تحویل میں لیتے ہوئے ہلچل پیدا کردی ہے۔ضلع کریم نگر میں ہلچل پیدا کرتے ہوئے غیر ضروری آپریشن کرتے ہوئے عوام سے پیسہ لوٹنے والے ڈاکٹروں کو منگل کے دن پولیس نے اپنے تحویل میں لیکر کورٹ کے حوالے کردیا۔ان دونوں کو 14دنوں تک ریمانڈ میں بھیجتے ہوئے کورٹلہ انچارج مجسٹریٹ سریمتی کویتا نے منگل کی رات احکامات جاری کئے ۔تانڈریال کی خاتون کی شکایت پر کتھلاپور انسپکٹر آف پولیس ایم نرنجن ریڈی 5اپریل 2016کو اے پی سی سیکشن 420کے تحت کیس درج کیا تب سے لیکر ان ملزمین کو گرفتار کرنے کی پولیس کی جانب سے کوششیں کی جارہی تھی ۔چند دنوں سے یہ دو ملزمین جو فرار تھے بروز منگل جگتیال کے سریش کمار ‘پی ایم پی ڈاکٹر گنیش کو حراست میں لے لیا ۔سرکل انسپکٹر آف پولیس راجا شیکھر راجو ‘کتھلاپور سب انسپکٹر آف پولیس نرنجن نے دفتر سرکل انسپکٹر آف پولیس کورٹلہ میں اخباری نمائندوں کو دیئے گئے بیان میں اس واقع سے واقف کروایا۔کورٹلہ انچارج مجسٹریٹ و جگتیال مجسٹریٹ سریمتی کویتا کے سامنے بروز منگل پیش کیا گیا۔سریمتی کویتا انچارج مسٹریٹ کورٹلہ نے ان دو ملزمین کو 14د ن ریمانڈ دیتے ہوئے احکامات جاری کئے جس پر دونوں ملزمین کو جگتیال اسپیشل سب جیل منتقل کیا گیا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT