Tuesday , September 25 2018
Home / شہر کی خبریں / مریض کے جسمانی خلیوں سے اسٹم سل کی تیاری، سی سی ایم بی کا انقلابی کارنامہ

مریض کے جسمانی خلیوں سے اسٹم سل کی تیاری، سی سی ایم بی کا انقلابی کارنامہ

امراض کہنہ کے آسان علاج کیلئے حیرت انگیز پیشرفت، طبی تحقیق اور ٹیکنالوجی کے فروغ کیلئے طلبہ کو تربیت
حیدرآباد ۔ 16 فبروری (سیاست نیوز) حیاتیاتی خلیوں سے متعلق حیدرآباد میں واقع مشہور سائنسی ادارہ سنٹر فار سلیولر اینڈ مالیکیولر (بیولوجی ؍ سی سی ایم بی) نے جو کونسل برائے سائنس و صنعتی تحقیق کا ایک اہم حصہ ہے۔ عام آدمی کے علاج کیلئے امراض اور شخصی ضروریات کے مطابق ادویات کی فراہمی، نئی ٹیکنالوجی پر مبنی ادارہ کے قیام کے عمل میں مصروف ہے، جس کے ذریعہ سائنسداں اب کسی مریض کے جسم سے نکالے جانے والے خلیوں کو اسے اسٹم سلس میں تبدیل کرسکتے ہیں جو اس مریض کے علاج میں معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔ نیز ان کے معائنوں کے ذریعہ ان ادویات کی نشاندہی بھی ہوسکتی ہے جن کے استعمال سے مریض پوری طرح صحتیاب ہوسکتے ہیں۔ اس ادارہ کے ڈائرکٹر ڈاکٹر راکیش کے مشرا نے کہا کہ حالیہ برسوں کے دوران ایسی کئی جدید ٹیکنالوجیز منظرعام پر آئی ہیں، جو شخصی ضروریات کے مطابق، بنائی جانے والی ادویات کو حقیقت میں بدلنے میں معاون ثابت ہوسکتی ہیں اور انہیں استعمال کرنے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ان اسٹم سلس کو انسولین بنا کر ایسے مریضوں کو دینے کی کوشش کی جارہی ہے جن مریضوں کے جسم زیادہ انسولین پیدا نہیں کرسکتے۔ ڈاکٹر مشرا نے کہا کہ اب یہ ٹیکنالوجی دستیاب ہوچکی ہے اور مناسب ذرائع سے اجازت کے بعد استعمال کی تیاری کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ تحقیق کے ابتدائی مرحلوں سے اس میں حصہ لینے والے طبی اور صنعتی ماہرین کو مصروف و مشغول رکھا گیا ہے۔ ہم انہیں نئی طبی ٹیکنالوجی کے فروغ میں ایک دوسرے کے ساجھیدار بنانا چاہتے ہیں۔ ڈاکٹر مشرا نے اس ضمن میں شانتا بائیوٹک کاحوالہ دیا جو اس مقصد کیلئے سی ایم بی کے ساتھ سفر شروع کرنے والی ہندوستان کی چند پہلی بڑی کمپنیوں میں شامل ہے۔ ہم ایسے دواساز صنعتی اداروں سے انہیں ایک ماہ، دو ماہ، چھ ماہ کیلئے درکار عملہ کی نوعیت اور صلاحیت اور پیشہ ورانہ مہارت کے بارے میں گفت و شنید کیا کرتے ہیں جس کے مطابق ہم ماہر طبی ٹیکنیشنس تیار کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس ادارہ نے تلنگانہ کے میڈیکل کالجوں میں طلبہ کیلئے طبی تحقیق کے مختلف پہلوؤں پر پروگرام شروع کررہے ہیں جس کا مقصد سائنسی تحقیق میں سائنسدانوں اور پیشہ ورانہ مہارت کے حامل افراد کے مابین تال میل و تعاون کو فروغ دینا ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT