Friday , November 24 2017
Home / کھیل کی خبریں / مرے، جوکووچ اور سرینا کیلئے سخت ڈرا

مرے، جوکووچ اور سرینا کیلئے سخت ڈرا

ملبورن۔ 13 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلین اوپن 2017ء کے ڈرا کا اعلان کردیا گیا ہے جس کی رو سے عالمی نمبر ایک اینڈی مرے اور چھ مرتبہ کے چمپئن نواک جوکووچ کے علاوہ خاتون زمرے میں سابق عالمی نمبر ایک اور یہاں ساتواں خطاب حاصل کرنے کی خواہاں سرینا ولیمس کے لیے فائنل تک کی راہ مشکل ہے۔ اینڈی مرے کو فائنل تک پہنچے سے قبل جاپانی ٹینس اسٹار کائی نشی کوری اور سابق چمپئن اسٹانس لس وائورنکا کا سامنا کرنا پڑے گا۔ برطانوی ٹینس اسٹار مرے کے لیے 2016ء انتہائی شاندار سیزن رہا جہاں انہوں نے دوسری مرتبہ ویمبلڈن خطاب حاصل کرنے کے علاوہ اولمپک میں گولڈ میڈل کے خطاب کا کامیابی سے دفاع کیا اور کیریئر میں پہلی مرتبہ ٹینس کی عالمی درجہ بندی میں پہلا مقام پر حاصل کرلیا۔ لیکن وہ گزشتہ 5 مرتبہ آسٹریلیا اوپن کے فائنل میں ناکامی دیکھ چکے ہیں جس میں 4 مرتبہ جوکو وچ کے خلاف ہی انہیں خطاب گنوانا پڑا۔ کوارٹر فائنل میں جوکووچ کا مقابلہ نشی کوری یا راجر فیڈرسس سے ہوسکتا ہے جبکہ 2014ء کے چمپئن وائورنکا سیمی فائنل میں ان کے حریف ہوں گے۔ 17 مرتبہ کے گرانڈ سلام چمپئن فیڈرر کو ڈرا میں 17 واں مقام حاصل ہوا ہے جو پہلے مرحلے کے مقابلہ میں کوالیفائر کا سامنا کریں گے جس کے بعد تیسرے رائونڈ میں ٹامس برڈک ان کے حریف ہوسکتے ہیں۔ جوکووچ کے لیے پہلے ہی مرحلہ سے سخت حریف کھلاڑیوں ا سامنا ہے جیسا کہ پہلا مقابلہ ان کا اسپین کے تجربہ کار کھلاڑی فرنانڈو ورڈاسکو سے ہوگا جن کے اس وقت 40 واں مقام تو ہے لیکن وہ جوکووچ کے خلاف کھیلے گئے 13 مقابلوں میں ناصرف 4 مرتبہ کامیاب رہے بلکہ انہوں نے گزشتہ برس ہم وطن رافل نڈال کو 5 سیٹوں پر مشتمل پہلے مرحلہ کے سنسنی خیز مقابلہ  میں شکست دی ہے۔ جوکووچ جو کہ ریکارڈ 7 ویں مرتبہ آسٹریلین اوپن کے لیے میدان میں اتریں گے تاہم کوارٹر فائنل میں ان کا سامنا تیز رفتار سرویس کیلئے مشہور مقامی کھلاڑی ڈومنٹ تھم سے متوقع ہے۔ جبکہ سیمی فائنل میں ایک اور تیز رفتار سرویس کے حامل کھلاڑی کینیڈا کے نیلوسرانک ان کے حریف ہوں گے۔ 2009 ء میں خطاب حاصل کرنے والے نڈال کو 9 واں مقام حاصل ہوا ہے اور وہ جوکووچ کی راہ میں حائل ہوسکتے ہیں۔ خاتون زمرے میں سرینا کو جہاں سخت ڈرا کا سامنا ہے وہیں دفاعی چمپئن انجلیک کربر کے لیے ایک اور فائنل میں رسائی حاصل کرنا آسان ہے جن کے لیے فائنل تک کی راہ ہموار ہے۔ سرینا کو پہلے ہی رائونڈ میں سیوٹزرلینڈ کی بلنڈا بنسک کا سامنا ہے جو اپنے کھیل کے لیے خطرناک کھلاڑیوں میں شمار کی جاتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT