Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / مزدور تنظیموں نے فیکٹری ایکٹ میں ترامیم کی مخالفت کی

مزدور تنظیموں نے فیکٹری ایکٹ میں ترامیم کی مخالفت کی

نئی دہلی، 14 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) بارہ مزدور تنظیموں نے آج مرکزی وزیر محنت بنڈارو دتاتریہ سے ملاقات کرکے فیکٹری ایکٹ میں مجوزہ ترامیم کی مخالفت کرتے ہوئے الزام لگایا کہ حکومت مزدوروں کے مفادات کو نظر انداز کر رہی ہے اور مزدور تنظیموں سے مناسب طریقے سے صلاح مشورہ بھی نہیں کر رہی ہے ۔بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے وابستہ بھارتیہ مزدور سنگھ اور کانگریس سے وابستہ ا نٹک اور بائیں جماعتوں سے منسلک سیٹو ، ایٹک اور مزدور تنظیموں کے لیڈروں نے دتاتریہ سے ان کے دفتر میں میٹنگ میں شرکت کرکے اپنا احتجاج درج کرایا۔ میٹنگ میں بی ایم ایس کے پون کمار، ہند مزدور سنگھ کے ہربھجن سنگھ سندھو، سیٹو کی میناکشی سندرم اور انٹک کے سیکرٹری ڈی ایل سچدیوا، ودیا ساگر گری، ایٹک کے راجیو ڈمری وغیرہ شامل تھے ۔بارہ مزدور تنظیموں کی جانب سے دتاتریہ کو دیئے میمو رنڈم میں کہا گیا ہے کہ فیکٹری ایکٹ میں مزدوروں کی حد تعداد 20 سے بڑھا کر 40 کئے جانے کی تجویز رکھی گئی ہے ، جو مناسب نہیں ہے ۔ اس کی حد کو ہٹایا جانا چاہئے ۔

TOPPOPULARRECENT