Saturday , December 16 2017
Home / Top Stories / مسئلہ کشمیر میں مداخلت سے برطانیہ کا انکار

مسئلہ کشمیر میں مداخلت سے برطانیہ کا انکار

Christian devotees take part in mass prayer at a church on the occasion of Christmas celebration in in srinagar on Sunday 25 December 2016 PHOTO BY SHAH JEHANGIR

ہندوستان اور پاکستان کو پائیدار حل کرنے کا مشورہ، پارلیمنٹ میں وزیرکا خطاب
لندن ۔ 20 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) برطانوی حکومت نے کہا ہیکہ برطانیہ مسئلہ کشمیر کا کوئی حل تجویز نہیں کرسکتا ہے اور نہ ہی اس ضمن میں ثالثی کے طور پر کام کرسکتا ہے اور واضح کہا کہ یہ ہندوستان اور پاکستان پر منحصر ہیکہ وہ اس مسئلہ کا کوئی پائیدار حل تلاش کریں۔ برطانوی دفترخارجہ میں وزیر الوک شرما نے جو ایشیائی امور کے انچارج ہیں، پارلیمنٹ میں مسئلہ کشمیر پر بحث کے دوران کہا کہ ’’ہندوستان اور پاکستان دونوں ہی برطانیہ کے دیرینہ اور اہم دوست ہیں۔ نیز ہندوستان اور پاکستانی نژاد عوام کے توسط سے ان دونوں ممالک کے ساتھ ہمارے نمایاں ر ابطے ہیں‘‘۔ الوک شرما نے مسئلہ کشمیر پر برطانوی حکومت کا موقف بیان کرتے ہوئے مزید کہا کہ ’’حکومت برطانیہ کا یہ دیرینہ موقف ہیکہ کشمیر کی صورتحال پر نہ تو وہ کوئی حل تجویز کرسکتا ہے اور نہ ہی ثالثی کے طور پر کام کرسکتا ہے۔ ہندوستان اور پاکستان کی حکومتوں پر منحصر ہیکہ وہ کشمیری عوام کی خواہشات کو ملحوظ رکھتے ہوئے اس مسئلہ کا پائیدار حل تلاش کریں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ ’’اختلافات کی یکسوئی کے راستہ کے طور پر مذاکرات جاری رکھنے کی کوششوں کی برطانیہ کی طرف سے بدستور حوصلہ افزائی کی جاتی رہے گی‘‘۔

TOPPOPULARRECENT