Tuesday , December 19 2017
Home / شہر کی خبریں / مستحکم جمہوریت پر توجہ سے فرقہ پرست سیاست کا خاتمہ ممکن

مستحکم جمہوریت پر توجہ سے فرقہ پرست سیاست کا خاتمہ ممکن

بے باکی اور حصول اعلیٰ تعلیم کی تلقین ، بالی ووڈ ہدایت کار پرکاش جھا سے خصوصی انٹرویو
محمد مبشرالدین خرم
حیدرآباد۔ 15 فروری ۔ عوام اپنے دِلوں سے خوف نکال دیں اور تعلیم حاصل کرتے ہوئے مستحکم جمہوریت پر توجہ دیں تو فرقہ پرست سیاست کا خاتمہ ممکن ہے۔ معروف بالی ووڈ ہدایت کار پرکاش جھا نے آج ایک خصوصی ملاقات کے دوران ان خیالات کا اظہار کیا۔ انہوں نے بتایا کہ معاشرہ میں پھیلی برائیوں سے ہی ہدایت کار کو کہانیاں ملتی ہیں اور جو کچھ پردۂ سیمیں پر دِکھایا  جاتا ہے، وہ حقیقی زندگی سے متاثر ہوکر ہی تیار کردہ ہوتی ہیں۔ پرکاش جھا نے 4 مارچ 2016ء کو ریلیز ہونے والی اپنی فلم ’’جئے گنگا جل‘‘ کے متعلق بتایا کہ یہ ایک خاتون آئی پی ایس عہدیدار کی کہانی ہے جس کی دیانت دارانہ خدمات کے راہ میں سیاسی رکاوٹیں پیدا کی جاتی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ فلم ’’گنگا جل‘‘ کو بھی ہندوستانی شائقین فلم سے زبردست پذیرائی حاصل ہوئی تھی اور اس فلم کے ہیرو اجئے دیوگن نے فلم کے کلائمکس میں مکالمہ کے دوران ایک جملہ کہا تھا جو حقیقت پر مبنی ہے: ’’سماج کو ویسی ہی پولیس ملتی ہے جیسا سماج ہوتا ہے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان کی موجودہ صورتحال انتہائی مضحکہ خیز ہوتی جارہی ہے۔ ذمہ دار شہری تحمل و عدم تحمل پر مباحث کررہے ہیں جبکہ ہندوستان کو فوری طور پر سوشیل انفراسٹرکچر تیار کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ عموماً ان کی فلموں میں سیاست دانوں کا منفی کردار اس لئے دکھایا جاتا ہے چونکہ وہ کہنے کے موقف میں نہیں ہیں کہ کوئی ایک بہتر ہے۔ پرکاش جھا نے فرقہ پرست سیاست کے خاتمہ کیلئے دِلوں سے خوف کو نکالنا ضروری ہے کیونکہ جب تک عوام کے دِلوں میں خوف برقرار رہے گا، اس وقت تک ’’سیاسی کھلاڑی‘‘ ان کا استحصال کرتے رہیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ ’’جمہوریت دراصل نمبر کا کھیل ہے اور نمبر کے حصول کیلئے عوام کو خوف زدہ کرتے ہوئے سیاست داں اپنے مفادات حاصل کررہے ہیں‘‘۔  سیاست داں درحقیقت عوام کے دِلوں میں موجود ڈر کا استعمال کرتے ہوئے اقتدار تک پہنچ رہے ہیں، اگر عوام خود بے خوف ہوکر ایک دوسرے پر اعتماد کرتے ہوئے جمہوریت کو مستحکم کریں اور حصول علم پر توجہ دیں تو ممکن ہے کہ اس ملک کی مجموعی ترقی ہوسکتی ہے۔ پرکاش جھا کے ہمراہ اس موقع پر فلم ’’جئے گنگا جل‘‘ میں اہم کردار ادا کرنے والے مانو کول بھی موجود تھے۔ انہوں نے بتایا کہ سماجی زندگی پر فلم کس حد تک اثرانداز ہوسکتی ہے، اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ عوام فلم دیکھنے کے بعد ایک فکر لے کر نکلتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی عوام کو ذہنی طور پر مستحکم بنانے کی کوشش کے طور پر وہ فلم سازی کرتے ہیں اور ہمیشہ ہی انہیں چیلنجس درپیش ہوتے ہیں چونکہ ان کی فلمیں سماجی موضوعات سے ہم آہنگ ہوتی ہیں لیکن موجودہ شائقین کی پسند کچھ اور ہے، اس کے باوجود وہ چیلنجس کا مقابلہ کرتے ہوئے ایسی ہی فلمیں ناظرین کی خدمت میں پیش کررہے ہیں۔ پرکاش جھا نے بتایا کہ ’’گنگا جل‘‘ فلم ہندوستان کے تقریباً ہر پولیس عہدیدار نے دیکھی ہے جس میں پولیس کے اختیارات اور طرز کارکردگی کو پیش کیا گیا ہے۔ فی زمانہ ہندوستانی پولیس آزادانہ اور غیرجانبدارانہ طور پر خدمات کی انجام دہی سے قاصر ہے اور انہیں حقائق پر مبنی ’’جئے گنگا جل‘‘ عوام کیلئے پیش کی جارہی ہے جس میں پولیس عہدیداروں کو  راہ میں رکاوٹیں اور ان کی مجبوریوں کو پیش کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ ہدایت کار وہی کچھ دکھاتا ہے جو سماج میں ہوتا ہے اور ان کی فلموں کی یہ خصوصیت ہے کہ وہ سسٹم کی گہرائی میں تحقیق کے بعد کہانی تیار کرتے ہیں۔ پرکاش جھا نے بتایا کہ ہندوستان میں موجودہ حالات کے تناظر میں یہ کہنا غلط نہ ہوگا کہ جہاں کہیں آگ لگی ہو ، اس میں تیل ڈالنے کا کام کیا جارہا ہے، جبکہ کوئی سیاست داں یا سیاسی جماعت آگ بجھانے پر غور نہیں کررہی ہے بلکہ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ کوئی آگ بجھانے کا کام کرے ۔ آج پولیس کا یہ عالم ہے کہ وہ کسی کو حراست میں لینے سے قبل 10 مرتبہ سوچتی ہے کہ اس کے نتائج کیا ہوں گے ، جبکہ جرم کے خاتمہ کیلئے اس طرح کا عمل نقصان دہ ثابت ہوتا ہے۔ پرکاش جھا فی الحال ’’جئے گنگا جل‘‘ کی ریلیز کے ساتھ ساتھ فلم ’’راج نیتی2‘‘ پر بھی کام کررہے ہیں جس میں ملک کے موجودہ سیاسی و سماجی صورتحال اور تقسیم کی سیاست کا احاطہ کرتے ہوئے حقائق کو عوام کے سامنے لانے کی کوشش کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس موضوع پر تیزی سے کام جاری ہے اور بہت جلد ’’راج نیتی2‘‘ کے ذریعہ ملک کے حالات اور سیاسی گلیاریوں میں جاری سرگرمیوں کا انکشاف ہوگا۔ ’’راج نیتی2‘‘ کی کہانی بڑی حد تک مکمل کرلی گئی ہے اور فلم کے کرداروں کا جائزہ لیا جارہا ہے، ساتھ ہی اس بات کی توقع کی جارہی ہے کہ ’’جئے گنگا جل‘‘ کی کامیاب ریلیز کے بعد ’’راج نیتی2‘‘ کی تیاریاں شروع کی جائیں گی۔ فلم ’’جئے گنگا جل‘‘ میں مرکزی کردار پدم شری پرینکا چوپڑہ ادا کررہی ہیں۔ اس کے علاوہ فلم میں راہول بھٹ، مانو کول، نی ند کامت اہم رول ادا کررہے ہیں اور خود پرکاش جھا بھی اس فلم میں ڈی ایس پی ’’بی این سنگھ‘‘ کے کردار میں نظر آئیں گے۔

TOPPOPULARRECENT