Friday , December 15 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مسجد سے متصل اراضی پر مورتی کی تنصیب سے کشیدگی

مسجد سے متصل اراضی پر مورتی کی تنصیب سے کشیدگی

سداسیوپیٹ میں دونوں فرقوں کا اجلاس، کمیونٹی ہال بنانے رکن اسمبلی کی تجویز پر حالات بحال

سداسیوپیٹ۔ 26 اکتوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) سداسیوپیٹ منڈل موضع مدی کنٹہ کے سرپنچ خواجہ نظام الدین و موضع کے مسلم قائدین نے ٹی آر ایس پارٹی دفتر پر منعقدہ ایک پریس میٹ میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سداسیوپیٹ منڈل کے مدی کنٹہ موضع میں سروے نمبر 187 کے تحت تقریباً 250 مربع گز کھلی اراضی جوکہ گاؤں کے بیچ مسجد سے متصل ہے۔ اس پر کئی دنوں سے کچھ شرپسند عناصر مندر بنانے کی کوششیں کررہے تھے لیکن ان کی یہ کوششیں ناکام ہورہی تھی۔ گزشتہ صبح کچھ مقامی شرپسند عناصر نے اس اراضی پر مورتی نصب کرتے ہوئے وہاں پر زعفرانی رنگ کے جھنڈے نصب کئے جیسے ہی یہ اطلاع مقامی مسلمانوں کو ملی، انہوں نے رکن اسمبلی سنگاریڈی چنتا پربھاکر کو واقف کرایا۔ مقامی رکن اسمبلی نے فوری طور پر حرکت میں آتے ہوئے پولیس کو مقام پر پہنچنے کی ہدایت دی اور پولیس مقام واردات پہنچ کر وہاں پر جمع شر پسند عناصر کو منتشر کرتے ہوئے وہاں سے مورتی کو ہٹا دیا اور سداسیوپیٹ پولیس اسٹیشن میں ڈی ایس پی سنگاریڈی تروپتی انا نے دونوں فرقوں کے ذمہ داروں کو طلب کرتے ہوئے ایک اجلاس منعقد کیا اور کہا کہ اس متنازعہ اراضی پر تمام فرقوں کے عوام کی سہولت کیلئے اک کمیونٹی ہال تعمیر کرنے کا مشورہ دیا۔ اس تجویز کو وہ دونوں فرقوں نے قبول کرلیا اور فوراً مقامی ایم ایل اے سے گذارش کرنے پر انہوں نے اپنے ذاتی فنڈ سے 10 لاکھ روپئے دیتے ہوئے اس جگہ پر کمیونٹی ہال تعمیر کرنے کا اعلان کیا۔ مقامی ایم ایل اے چنتا پربھاکر کے اس اعلان کا شکریہ ادا کرنے کی غرض سے یہ پریس میٹ رکھی گئی اور اس پریس میٹ سے خطاب کرتے ہوئے جناب اکبر حسین صدر عیدگاہ کمیٹی نے بھی مقامی مسلمانوں کی جانب سے ایم ایل اے کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ مقامی ایم ایل اے چنتا پربھاکر نے فوری طور پر متوجہ ہونے کی وجہ سے بہت بڑا واقعہ ٹل گیا۔ اس موقع پر ٹی آر ایس سینئر قائد محمد عارف الدین، اسد پٹیل، محمد، صلاح الدین، منڈل کوآپشن ممبر، مبین محی الدین صدر ٹی آر ایس اقلیتی سیل، محمد، ایوب خان، انجنیلو، مارکٹ کمیٹی نائب صدر کے علاوہ کئی مقامی قائدین موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT