مسجد عامرہ کی اراضی پر ناجائز تعمیر بلدیہ نے منہدم کردی مسلمانوں کے احتجاج پر جی ایچ ایم سی کا بروقت اقدام

حیدرآباد۔/18مارچ، (سیاست نیوز) قلب شہر میں عامرہ مسجد عابڈس کی اراضی پر ناجائز قبضہ اور اس پر تعمیراتی کاموں کی مذموم کوششوں کا سلسلہ سب پر عیاں ہے اور آج صبح کی اولین ساعتوں میں سورج بھان جیویلرس نے مسجد کی اراضی پر تعمیراتی کام کو شروع کرتے ہوئے چھت ڈال دیا۔ ظہر کی نماز کیلئے مسجد پہنچنے والے مصلیوں اور انتظامی کمیٹی کے ارکان نے سو

حیدرآباد۔/18مارچ، (سیاست نیوز) قلب شہر میں عامرہ مسجد عابڈس کی اراضی پر ناجائز قبضہ اور اس پر تعمیراتی کاموں کی مذموم کوششوں کا سلسلہ سب پر عیاں ہے اور آج صبح کی اولین ساعتوں میں سورج بھان جیویلرس نے مسجد کی اراضی پر تعمیراتی کام کو شروع کرتے ہوئے چھت ڈال دیا۔ ظہر کی نماز کیلئے مسجد پہنچنے والے مصلیوں اور انتظامی کمیٹی کے ارکان نے سورج بھان جویلرس کی جانب سے چھت کی تعمیر کے بعد بلدیہ کے دفتر پر دھرنا دیا۔ حالانکہ کمیٹی نے مسجد سے متصل قیمتی اراضی پر تعمیراتی کاموں کے خلاف بلدیہ کے عہدیداروں کو ہمیشہ آگاہ کیا لیکن بلدیہ کے چند بدعنوان عہدیداروں کی ملی بھگت کی وجہ سے ناجائز قابضین کے حوصلے بڑھے ہوئے ہیں جس کی وجہ سے آج صبح چھت بھی ڈال دیا گیا۔ انتظامی کمیٹی اور دیگر مقامی افراد نے جب چھت کی تعمیر کے خلاف بلدیہ کی سرکل نمبر 8کمشنر اے شیلجہ کے چیمبر پر دھرنا دیا تو انہوں نے اپنے دفتر کے تمام عہدیداروں کو طلب کیا جس میں سیکشن آفیسر مدن راج، چیف پلاننگ آفیسر نرسنگ راؤ، اے سی پی سامبیا اور یونین صدر پرتاپ سنگھ قابل ذکر ہیں ان سبھی سے اس ناجائز تعمیر کی تفصیلات حاصل کی اور ان سے استفسار کیا کہ کیا سورج بھان کے پاس چھت تعمیر کرنے کا بلدیہ سے حاصل کردہ اجازت نامہ ہے ؟ تب معلوم ہوا کہ چھت کی تعمیر غیر قانونی ہے لہذا اسے فوراً منہدم کردیا جائے۔ بلدیہ کی کمشنر کی جانب سے حکم کی تعمیل کیلئے جی ایچ ایم سی کے ٹاسک فورس نے عابڈس پولیس کے معقول بندوبست میں چھت کو منہدم کردیا۔ عابڈس کی معروف مسجد عامرہ کی اراضی پر ناجائز طور پر چھت کی تعمیرپر انتظامی کمیٹی اور مصلیا ن مسجد کی کثیر تعداد کی جانب سے بلدیہ کمشنر کے دفتر پر دھرنا اور پھر عہدیداروں کی موجودگی میں ٹاسک فورس کی جانب سے چھت کو منہدم کرنے کی خبر سوشیل میڈیا پر آگ کی طرح پھیل گئی اور مسجد کی اراضی پر ناجائز تعمیر کو منہدم کرنے کے مناظر کو دیکھنے کیلئے مسلمانوں کی کثیر تعداد جمع ہوگئی تھی جن کے چہروں پر خوشی کے آثار نمایاں تھے۔ چھت کی ناجائز تعمیر کو منہدم کروانے میں اہم رول ادا کرنے والی انتظامی کمیٹی کو ہر گوشہ سے مبارکباد دی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT