Monday , November 20 2017
Home / ہندوستان / مسعود اظہر کی گرفتاری پر سیاسی جماعتوں کا محتاط ردعمل

مسعود اظہر کی گرفتاری پر سیاسی جماعتوں کا محتاط ردعمل

پاکستان کو کانگریس کی جزوی شباشی، گرفتاری کے بعد سخت کارروائی پر بھی زور
دونوں ملکوں کے امن پسند عوام کیلئے ایک اچھا قدم: بی جے پی
ایسے افراد کی گرفتاری و رہائی پاکستان کا کھیل : شیوسینا
نئی دہلی ۔ 13 ۔ جنوری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کیجانب سے آج جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر کی گرفتاری پر بی جے پی اور کانگریس نے محتاط ردعمل کا اظہار کیا ہے لیکن شیوسینا نے اس کارروائی  کو کوئی اہمیت نہیں دی اور کہا کہ ’’اس قسم کی گرفتاری و رہائی پاکستان کیلئے معمول کا کھیل ہے‘‘۔ بی جے پی نے مسعود اظہر کی گرفتاری کو ایک مثبت قدم قرار دیا جو ہندوستان اور پاکستان کے امن پسنداور ترقی کے خواہاں عوام کیلئے بہتر ہے۔ کانگریس نے اس کارروائی کیلئے پاکستان کو ’جزوی شباشی‘‘ دی۔ لیکن اظہر کے خلاف قانونی کارروائی اور سزاء دلاتے ہوئے ٹھوس اقدامات کرنے کا مطالبہ بھی کیا ۔ بی جے پی کے قومی سکریٹری اور میڈیا سل کے انچارج سری کانت شرما نے کہا کہ ’’اگر (اظہر کی) گرفتاری سے متعلق میڈیا اطلاعات درست ہیں تو یہ دونوں ملکوں کیامن پسند اور ترقی کے خواہاں عوام کیلئے ایک بہتر قوم ہے‘‘ ۔ انہوںنے مزید کہا کہ ’’پاکستان اگر دہشت گردی کیخلاف قدم اٹھاتاہے تو یہ دونوں ملکوں کیلئے اچھا ہے کیونکہ دہشت گرد ساری انسانیت کے دشمن ہیں۔ دہشت گردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئے اب ساری دنیا متحد ہوگئی ہے‘‘۔ کانگریس کے ترجمان ابھیشک مانو سنگھوی نے اظہر کی گرفتاری پر پاکستان کو ’’جزوی شباشی‘‘ دی۔ تاہم کہا کہ اس بات کا ثبوت دینا بھی ضروری ہے کہ آیا یہ گرفتاری دراصل اظہر پر مقدمہ چلاتے ہوئے جرم ثابت کرنے کیلئے کی گئی ہے ۔ سنگھوی نے مزید کہا کہ ’’پاکستان کے یہ اقدامات اگر حقیقی ، مخلصانہ اور طویل مدتی ہیں تو میں ہنوز پرامید ہوں کہ اس سے پاکستان کا مقام نہیں گھٹے گا بلکہ ہندوستان کے مطالبہ کے آگے جھکتے ہوئے وہ اپنا مقام بلند کرسکتا ہے‘‘۔ بی جے پی کے زیر قیادت این ڈی اے کی ایک اہم حلیفل جماعت شیوسینا اظہر کے خلاف پاکستان کی کارروائی سے زیادہ متاثر نہیں ہوئی ہے ۔ شیوسینا نے کہا کہ ’’چند افراد کی گرفتاری اور رہائی پاکستان کا حسب معمول ایک کھیل ہے۔ 26/11 کے ممبئی دہشت گرد حملوں کے وقت بھی چند مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا تھا جنہیں بعد میں چھوڑ دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT