Friday , November 24 2017
Home / دنیا / مسلمانوں پر ظلم کرنے مائنمار کی فوجی جنتا کو اسرائیلی اسلحہ کی سربراہی جاری

مسلمانوں پر ظلم کرنے مائنمار کی فوجی جنتا کو اسرائیلی اسلحہ کی سربراہی جاری

 

۔60 ہزار مسلمان ملک چھوڑ کر فرار
دریائے ناف سے 12 بچوں کے بشمول 26 پناہ گزینوں کی نعشیں برآمد
مائنمار میں انسانی حقوق کی سنگین پامالی
یانگون۔7 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) مائنمار میں مظلوم مسلمانوں پر ظلم و زیادتیوں کا پہاڑ توڑنے کے لیے اسرائیل کی جانب سے مائنمار کی فوج ’’جنٹا‘‘ خطرناک اسلحہ سربراہ کیئے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ اقوام متحدہ کی ڈاٹا کے مطابق مائنمار کی ریاست رہینا سے اب تک 60 ہزار مسلمان جان بچاکر فرار ہوئے ہیں۔ ان کے مواضعات کو آگ لگادی گئی ہے اور تشدد میں اضافہ کیا گیا ہے۔ سٹیلائٹ تصاویر سے پتہ چلتا ہے کہ مائنمار کی فوج اور انتہاپسند بدھسٹوں کے مظالم میں کوئی کمی نہیں آئی ہے۔ مائنمار سے جان بچاکر نکلنے والے ہزاروں مسلمان بنگلہ دیش کی سرحد پر پھنسے ہوئے ہیں اور ان میں سے کئی مسلمانوں کو پناہ گزین کیمپ میں رکھا گیا ہے۔ دریائے ناف سے 12 بچوں کے بشمول 26 پناہ گزینوں کی نعشیں برآمد کی گئی ہیں۔ مائنمار اور بنگلہ دیش کے درمیان بہنے والی اس دریا کا پانی مسلمانوں کے خون سے لال ہوگیا ہے۔ 1948ء میں برطانیہ سے آزادی حاصل کرنے کے بعد برما کے کئی حصوں میں خانہ جنگی جاری ہے۔ نومبر 2015ء میں جمہوری انتخابات ہوئے اور نوبل انعام یافتہ انسانی حقوق کی کارکن آنگ سانگ سوچی منتخب بھی ہوئیں لیکن حکومت پر ان کا کوئی کنٹرول نہیں ہے کیوں کہ فوج نے سارا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے رکھا ہے۔

TOPPOPULARRECENT