Monday , December 18 2017
Home / Top Stories / مسلمانوں کو %12 تحفظات کیلئے کانگریس کا ریاست بھر میں زبردست احتجاج

مسلمانوں کو %12 تحفظات کیلئے کانگریس کا ریاست بھر میں زبردست احتجاج

چیف منسٹر کے سی آر کے پتلے نذرآتش ، حکومت کے خلاف نعرے ، حیدرآباد کے بشمول اضلاع میں احتجاجی دھرنا اور ریالیاں
حیدرآباد۔ 21 اپریل (سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ کی جانب سے آج 12% مسلم تحفظات کی تائید میں گاندھی بھون کے روبرو احتجاجی دھرنا منظم کرتے ہوئے چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ کا پتلا نذرآتش کیا گیا۔ اس احتجاجی دھرنے میں صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر محمد خواجہ فخرالدین، جنرل سیکریٹریز تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی مسٹر ایس کے افضل الدین، مسٹر سید عظمت اللہ حسینی ترجمان مائناریٹی ڈپارٹمنٹ، مسٹر سید فاروق پاشاہ قادری کانگریس قائدین وجئے کمار نائیڈو، مسٹر سید شوکت رحمت علی جنرل سیکریٹری جی سی سی مسٹر سید نظام الدین سابق کارپوریٹر مسٹر محمد غوث مسٹر معراج محمد کے علاوہ ساجد شریف اور دیگر نے شرکت کی۔ صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل کی قیادت میں کانگریس کے کارکن ریالی کی شکل میں گاندھی بھون پہونچے اور سڑک پر احتجاج کرتے ہوئے چیف منسٹر کے سی آر کے خلاف نعرے لگائے۔ 12% مسلم تحفظات کے معاملے میں مسلمانوں کو دھوکہ دینے کا الزام عائد کرتے ہوئے چیف منسٹر کا پتلا نذرآتش کیا۔ کانگریس کارکنوں کے احتجاج سے کافی دیر تک ٹریفک جام ہوگئی۔ 12% مسلم تحفظات کی تائید میں پہلی مرتبہ حیدرآباد کے بشمول ریاست کے کئی مقامات پر چیف منسٹر کے پتلے نذرآتش کئے گئے۔ بعدازاں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر محمد خواجہ فخرالدین نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے اقتدار حاصل ہونے کے 4 ماہ میں مسلمانوں کو 12% تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا، تاہم 24 ماہ گذرنے کے باوجود چیف منسٹر مسلمانوں سے کہا گیا وعدہ پورا کرنے میں ناکام ہیں۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ کو ریاست بھر میں احتجاجی دھرنے منظم کرنے کی ہدایت دی ہے۔ گریٹر حیدرآباد میں مسٹر شیخ عبداللہ سہیل کی قیادت میں احتجاجی دھرنے منظم کئے جارہے ہیں۔ اسی طرح ریاست کے تمام اضلاع میں ٹی آر ایس حکومت کے خلاف کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کئے جارہے ہیں۔ اگر چیف منسٹر اپنے وعدے کو پورا کرنے میں ناکام ہوتے ہیں تو کانگریس کی جانب سے اپنے احتجاج میں مزید شدت پیدا کی جائے گی۔ صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل نے کہا کہ کانگریس کی جانب سے کل دستخطی مہم کے نشانے کو پورا کرنے کے بعد آج چیف منسٹر کا  پتلا نذرآتش کیا گیا ہے۔ دستخطی مہم کو سماج کے تمام طبقات کی بھرپور تائید حاصل ہوئی ہے۔ چیف منسٹر تلنگانہ 12% مسلم تحفظات کے وعدے کو بھول چکے ہیں۔ کانگریس کی جانب سے مختلف طریقوں سے احتجاج کرتے ہوئے گہری نیند سونے والی حکومت کو جگانے کی کوشش کی جارہی ہے۔
٭     تلنگانہ میں مسلمانوں کو% 12تحفظات کیلئے روزنامہ سیاست کی جانب سے شروع کردہ شدت مہم اختیار کرگئی ہے اور ریاست کی بڑی اپوزیشن جماعت کانگریس نے اس مہم سے اقلیتوں کی قربت حاصل کرنے اور اپنے حریفوں کو سبق سکھانے کا ہتھیار بنالیا ہے۔ واضح رہے کہ نیوز ایڈیٹر سیاست جناب عامر علی خاں کی سخت محنت اور مسلمانوں کو 12% تحفظات کیلئے شعور بیداری کی جدوجہد عروج پر پہونچنے کے بعد اب کانگریس اس مہم سے  جڑتے ہوئے ایک طرف مسلمانوں سے انصاف اور خود پارٹی سطح پر مستحکم ہونے کا فائدہ حاصل کرنا چاہتی ہے۔ ایوان میں مسلم نمائندوں کی 12% تحفظات پر خاموشی اور مسلمانوں کی نمائندہ مقامی جماعت کی خاموش پالیسی کے بعد اب کانگریس اقلیتوں کے ذریعہ سیاسی سبقت حاصل کرنے کی کوشش میں جٹ گئی ہے۔ کانگریس پارٹی کی جانب سے اعلان پر آج ریاست بھر میں شدید احتجاج کیا گیا۔ اضلاع کے ہیڈکوارٹرس کے علاوہ منڈل سطح پر مقامی مسلم تنظیموں کی مدد سے کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ نے زبردست احتجاج منظم کیا۔ شہر حیدرآباد کے بعد ریاست کے دوسرے بڑے مسلم آبادی والے شہر نظام آباد میں کانگریس بھون سے کلکٹریٹ تک زبردست احتجاجی ریالی منظم کی گئی۔ صدر ضلع کانگریس مسٹر طاہر بن حمدان کے علاوہ سرینواس یادو، عبدالقدوس، سید نجیب علی، مولانا کریم الدین کمال، کیشو وینو اور دیگر نے شرکت کی۔ مسٹر سمیر احمد صدر ضلع اقلیتی ڈپارٹمنٹ نے ریالی کی قیادت کی۔ اس احتجاج میں سینکڑوں افراد نے شرکت کی۔ جبکہ ضلع ورنگل میں 12% مسلم تحفظات کیلئے آج ہمکنڈہ کانگریس بھون میں کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ کی جانب سے میٹنگ منعقدہ کی گئی اس اجلاس کے بعد چیف منسٹر کے سی آر کا پتلا نذرآتش کیا گیا۔ کانگریس قائدین محمد جمال شریف ایڈوکیٹ، محمد شاہنواز بیگ، محمد عبید احمد صدیقی، غلام افضل، محمد ظہیرالدین، محمد بابا، محمد فیروز، محمد افضل بیابانی نے کہا کہ ریاستی چیف منسٹر فوری 12% تحفظات مسلمانوں کو دیں۔ انہوں نے کہا کہ روزنامہ سیاست کی جانب سے یہ تحریک شروع ہوئی۔ آج یہ تحریک عوام تک پہنچ گئی ہے۔ نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست جناب عامر علی خاں نے 12% مسلم تحفظات کئے تحریک شروع کی جو تلنگانہ کے ہر ضلع و منڈل ہیڈکوارٹرس و گاؤں گاؤں پہنچ چکی ہے۔ ضلع کھمم میں کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ کی جانب سے پارٹی کی ہدایت پر آج کھمم میں 12% مسلم تحفظات کی تائید میں زبردست احتجاج کرتے ہوئے جوائنٹ کلکٹر کو یادداشت پیش کی گئی۔ صدر ضلع کھمم اقلیتی ڈپارٹمنٹ مسٹر تاج، صدر سٹی کھمم اقلیتی ڈپارٹمنٹ عبدالمجاہد کے زیراہتمام احتجاج منظم کیا گیا جس میں ضلع کھمم کانگریس کے صدر مسٹر اے شمیم سیوا دل کے صدر جاوید آئی این ٹی وی سی کے ٹاؤن صدر پاشاہ یعقوب سابق کارپوریٹر مجید و دیگر موجود تھے۔ عادل باد میں مسٹر سی رامچندر ریڈی کی قیادت میں منعقدہ اس احتجاجی دھرنا میں چیف منسٹر کے خلاف نعرہ بلند کئے گئے۔ اس موقع پر ساجد خاں صدر ٹاؤن کمیٹی و موضع مائناریٹی سیل کے علاوہ ڈگمبر راؤ، صفی اللہ خاں، شیخ کالج، شکیل احمد، سنجیوا ریڈی، اشوک اور دیگر موجود تھے۔ چیف منسٹر پر دباؤ آلا جارہا ہے کہ وہ مسلمانوں سے کئے گئے وعدہ کو پوری پورا کرے۔

TOPPOPULARRECENT