مسلمانوں کو بھی ایس سی ؍ایس ٹی کے طرز پر قانونی تحفظ فراہم کرنے یونائٹیڈ مسلم مورچہ کا مطالبہ

نئی دہلی 17جنوری(سیاست ڈاٹ کام)آل انڈیا یونائٹیڈ مسلم مورچہ نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اقلیتوں کو بھی درج فہرست ذات اور قبائل کی طرح قانونی تحفظ دینے کے لئے دلتوں پر مظالم کے خلاف قانون کے دائرہ میں شامل کیا جائے ۔مورچہ کے قومی نائب صدر و ترجمان کمال اشرف نے آج ایک صحافتی بیان جاری کر کہا کہ ملک کی حالات اور بدلتے ہوئے منظرنامے کو دیکھتے ہوئے مورچہ کے قومی صدر و سابق ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر اعجاز علی نے اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کو قانونی تحفظ فراہم کرنے کے مطالبہ پر زور دینے کے لئے آئندہ 28جنوری کو نئی دہلی میں تحفظ معاشرہ کانفرنس (دنگا مکت، ننگا مکت سمیلن) کا انعقادکیاہے ۔مسٹر کمال اشرف نے کہا کہ آج ملک کی جو حالت ہے وہ ایک دو دن کی پیداوار نہیں ہے بلکہ گذشتہ 60 ، 70 برسوں کی صحیح یا غلط سیاست کا نتیجہ ہے ۔ اس مدت میں ملک نے کیا کھویا کیا پایا اس پر غور کرنا ضروری ہے ۔مورچہ کے ترجمان حافظ غلام سرور نے کہا کہ ملک کے اتحاد اور سالمیت اور آپسی میل ملاپ کو قائم رکھنے کے لئے ہی آل انڈیا یونائٹیڈ مسلم مورچہ کام کررہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT