Monday , January 22 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کیلئے حکومت کو جنگی خطوط پر کام کرنے کا مشورہ

مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کیلئے حکومت کو جنگی خطوط پر کام کرنے کا مشورہ

ٹی آر ایس حکومت کا وعدہ وفا نہ ہوسکا، ٹی آر سی کے مذاکرہ سے جناب ظہیرالدین علی خان و دیگر کا خطاب

ٹی آر ایس حکومت کا وعدہ وفا نہ ہوسکا، ٹی آر سی کے مذاکرہ سے جناب ظہیرالدین علی خان و دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔5جولائی(سیاست نیوز)معاشی اور تعلیمی طور پرپسماندہ اقوام اور طبقات کو تحفظات کی فراہمی کے ذریعہ سماج میںنمایاں مقام دلانا مرکزاور ریاستوں میںبرسراقتدارسکیولر حکمران جماعت کی اولین ذمہ داری ہے جبکہ پسماندگی کاشکار طبقات کی تحفظات سے محرومی ناکام حکمرانی کا ثبوت ہے بلکہ سکیولر زم کے فروغ میںبھی حکمران جماعت کا یہ اقدام بڑی رکاوٹ ثابت ہوگا۔ آج یہاں چندرم ‘ حمایت نگر میں تلنگانہ ریسور س سنٹر کے زیراہتمام تلنگانہ ریاست میںمسلمانوں کے لئے بارہ فیصد تحفظات کا نفاذ کے عنوان پر منعقدہ181ویں مذاکرے سے خطاب کے دوران مختلف مذہبی‘ سماجی وسیاسی تنظیموں سے وابستہ دانشورائوں نے یہ بات کہی۔ مذاکرے کی نگرانی کنونیر ایس سی‘ ایس ٹی‘ بی سی‘ مسلم فرنٹ پروفیسر انور خان نے کی جبکہ جناب ظہیرالدین علی خان‘ پروفیسر پی ایل ویشوویشو ار رائو‘‘ صدرنشین ایچ اے ایس انڈیا مولانا سید طار ق قادری ‘ صدر جماعت اسلامی ہند تلنگانہ ‘ آندھرا پردیش ‘ اڑیسہ مولانا حامد محمد خان‘ کنونیر ایس سی ‘ ایس ٹی‘ بی سی ‘ مسلم فرنٹ جناب ثناء اللہ خان‘ جناب مجاہد ہاشمی‘ جناب نعیم اللہ شریف‘ جناب ساجد خان‘ صدرنشین تلنگانہ میناریٹی مسلم ریزویشن فرنٹ جناب حنیف احمد‘ جناب احمد علی کیوریٹر سالار جنگ میوزیم کے علاوہ دیگر سماجی جہدکاروں نے بھی اس مذکورہ عنوان پر اپنے تاثرات پیش کئے۔جناب ظہیر الدین علی خان نے مسلمانوں کو تحفظات فراہم کرنے کے لئے حکومت تلنگانہ کو جنگی خطوط پر کام کرنے کامشورہ دیا ۔ انہوں نے کہاکہ تلنگانہ میں برسراقتدار حکمران جماعت ٹی آر ایس نے اپنے انتخابی وعدے میں مسلمانوں کے ساتھ انصاف کے لئے آبادی کے تناسب سے انہیںتحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا جو ایک سال کی تکمیل کے باوجود ہنوز تکمیل سے محروم ہے۔ انہوں نے مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کے لئے بڑے پیمانے پر تحریک کو بھی ضروری قراردیا۔ چیرمن ٹی آر سی مسٹر ایم ویدا کمار نے کہاکہ تحفظات کے ذریعہ تلنگانہ میںمسلمانوں کی تعلیمی اور معاشی پسماندگی کودور کیا جاسکے گا۔ انہوں نے کہاکہ تحفظات مسلمانوں کو جمہوری حق ہے اور اسکی فراہمی حکومت تلنگانہ کی ذمہ داری ہوگی۔ پروفیسر ویشوویشو ار رائو نے کہاکہ جمہوریت میںتمام قوموں اور طبقات کے ساتھ یکساں سلوک حکمران جماعت کی ذمہ داری ہے مگر تلنگانہ حکومت جمہوریت کے تمام تقاضوں کو بالائے طاق رکھ کرحکمرانی کررہی ہے بالخصوص ریاست تلنگانہ میں مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کے متعلق حکومت تلنگانہ کا رویہ تشویش کا باعث بنا ہوا ہے۔ انہوں نے بھی تحفظات کو مسلمانوں کا جمہوری حق قراردیا ۔ مولانا سید طار ق قادری نے کہاکہ مسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کے باضابطہ اعلان تک حکومت تلنگانہ کے کسی بھی وعدے پر بھروسہ نہیںکیاجاسکتا۔ انہوں نے مسلمانوں کے ساتھ انصاف کی اس جدوجہد میںایچ اے ایس انڈیا تمام محاذوں پر ہر قسم کے تعاون کے لئے ہمیشہ تیار ہے۔ مولانا حامد محمد خان نے تحفظات کی فراہمی میںتاخیر کو مسلمانوں کے ساتھ حکومت تلنگانہ کا ایک اور دھوکہ قراردیتے ہوئے کہاکہ حکومت تلنگانہ نے سدھیر کمیٹی کے ذریعہ ریاست تلنگانہ کے مسلمانوں کو پھر ایک مرتبہ گمراہ کرنے کاکام کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سدھیر کمیٹی کی تشکیل کے بغیر بھی ریاستی حکومت مسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کا فیصلہ لے سکتی ہے۔ان کے علاوہ مذاکرے سے خطاب کرنے والے دیگر مقررین نے بھی مسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کے معاملے میں حکومت تلنگانہ کے غیرسنجیدہ رویہ پر شدید برہمی ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ پبلک سرویس کمیشن کی جانب ایک لاکھ جائیدادوں پرتقررات کے اعلامیہ کی اجرائی سے قبل تمام شعبہ حیات میںتلنگانہ کے مسلمانو ںکو بارہ فیصد تحفظات فراہمی کا فیصلہ ہی ساٹھ سالوں سے مصائب کاشکار تلنگانہ کے مسلمانوں کے ساتھ انصاف کی پہل ہوگی۔ مقررین نے پوری ریاست میںمسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کے متعلق تحریک کے طور پر پریس کانفرنس‘ گول میزکانفرنس ‘ اجلاس ‘ جلسہ عام اور عوام کے اندر اشتہار بازی کے ذریعہ شعور بیداری مہم چلانے کا بھی اعلان کیا۔ بعدازاں تلنگانہ ریسور س سنٹر کی جانب سے مقررین اور شرکاء کیلئے دعوت افطار اورعشائیہ کا بھی اہتمام کیاگیا۔ جناب حیات حسین حبیب‘ عبدالستار مجاہد‘ رشید خان آزاد ‘اسلم عبدالرحمن‘ محمد شاہد‘ سراج الدین اعجاز‘ حافظ متین‘ محمد انور‘ کرشنا‘ چکوڈا پربھاکر‘رتنا مالا‘ امبیکا کے علاوہ دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے

TOPPOPULARRECENT