Monday , June 18 2018
Home / اضلاع کی خبریں / مسلمانوں کو دینی تعلیم سے آراستہ ہونے کی تلقین

مسلمانوں کو دینی تعلیم سے آراستہ ہونے کی تلقین

کیرامیری۔/19جنوری۔(سیاست نیوز) مجلس تحفظ ختم نبوت ریاست تلنگانہ و آندھراپردیش کے زیر اہتمام موضع پاٹن تعلقہ جیوتی ضلع چندرپور (مہاراشٹرا)میں منعقدہ جلسہ "سیرت الانبیاء ؑو تحفظ ایمان" کا آغاز تلاو ت کلام پاک سے کیا گیا ۔مدرسہ عربیہ کاشف العلوم جینور کے طالب علم محمد صادق نے قرئا ت پاک پیش کی ۔اسی موقع پرعبدالمغنی چشتی ،قادری ،نق

کیرامیری۔/19جنوری۔(سیاست نیوز) مجلس تحفظ ختم نبوت ریاست تلنگانہ و آندھراپردیش کے زیر اہتمام موضع پاٹن تعلقہ جیوتی ضلع چندرپور (مہاراشٹرا)میں منعقدہ جلسہ “سیرت الانبیاء ؑو تحفظ ایمان” کا آغاز تلاو ت کلام پاک سے کیا گیا ۔مدرسہ عربیہ کاشف العلوم جینور کے طالب علم محمد صادق نے قرئا ت پاک پیش کی ۔اسی موقع پرعبدالمغنی چشتی ،قادری ،نقشبندی نائب صدر مجلس تحفظ ختم نبوت تلنگانہ و آندھراپردیش عوام سے مخاطب ہوتے ہوئے کہاکہ امت محمدیہ کے ہر شخص پر لازم ہے کہ وہ دینی تعلیم سے آراستہ ہوں اور نبی پاک ﷺ کے نقش قدم پر چلیں۔بعد ازاں مہما ن خصوصی مولانا انیس آزاد بلگرامی ناظم وبانی سیدالمدارس دہلی و صدر ترویج تعلیم کونسل دہلی ، نے عوام سے خطا ب کے دوران کہاکہ ہر مسلمان کو چاہیے کہ وہ انبیاء علیہ السلام کے سیرت کے بارے میں معلومات حاصل کریں۔ انہوں سرورکائنات ﷺکی سیرت بیان کرتے ہوئے کہا کہ آپ کی زندگی تمام انبیا ء کرام اور مصلحین عالم سے علانیہ ممتاز نظر آتی تھی ۔وہ خود اپنی تعلیم کا آپ نمو نہ تھے ۔انسانوں کے مجمع عام میں وہ جو کہتے تھے گھر کے خلوت کدہ میں وہ اسی طرح نظر آتے تھے ۔اخلاق و عمل کا جو نکتہ وہ دوسروں کو سکھا تے تھے وہ خود اس کا عملی پیکر بن جاتے تھے ۔ہمارے نبی کے صدقہ میں یہ دنیا قا ئم ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قادیانی فرقہ ایک گمراہ فرقہ ہے۔ اور اس فرقہ کو مسلمانوں کی ہر جماعت نے کافر قرار دیا ہے۔ یہ فرقہ معصوم اوربھولے بھالے مسلمانوں کو پیسے کا لالچ دیکر گمراہ کرنے کی کوشش کررہا ہے۔ اسی لیے ہر مسلمان پر لازم ہے کہ وہ دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ سیرت انبیاء کے بارے میں بھی معلومات لریں۔بعد ازاں مولانا انصاراللہ آرگنائزرمجلس تحفظ ختم نبوت تلنگانہ و آندھراپردیش ، مفتی سعید اکبر صدر مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع نظام آباد ،ناظم جلسہ مفتی ابوزر صران عادل آباد نے خطاب کیا ۔واضح رہے کہ مہاراسٹرا کے سرحد پرچندراپور ضلع کے مو اضعات چکلی،پاٹھن ،جیوتی،کے علاوہ اور بھی کچھ ایسے دیہی مواضعات ہیں جہاں پر مسلمان تو موجود ہیں لیکن ان مواضعات میں د ینی تعلیم کی کمی ہونے کی وجہ سے وہ دین سے بہت دور ہیں ۔جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے قادیانی فرقہ کے کچھ لوگ ان مواضعات میں اپنا ٹھکانہ بناکر وہاں کے معصوم بھو لے بھالے مسلمانوں کو اپنے جال میں پھنسارہے ہیں اور کچھ مسلمانوں نے فرقہ قادیانیت کو اپنالیا ہے مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع نظام آباد کواس کی اطلاع ملنے پر گزشتہ دو سالوں سے ان علاقوں میں کئی جلسے منعقد کئے جارہے ہیں اور ان علاقوں میں مجلس تحفظ ختم نبوت ضلع نظام آباد کی جانب سے کئی مساجد و مکاتب قائم کرتے ہوئے وہاںعلماء و حفاظ کو منتخب کیا گیا ہے۔ جس سے فرقہ قادیانیت میں شامل کئی خاندانوں نے دوبارہ اسلام بھی قبول کرلئے گئے ہیں ۔ اس جلسہ کے اختتام کے بعد مہاراسٹرا تحفظ مسلم حقوق تنظیم کے کچھ دانشوروں نے شہ نشین پر رونماء ہوکرخطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست مہاراسٹرا میں پہلے مسلمانوں کو 8فیصد تحفظ فراہم کیا گیا تھا لیکن “رویندر فرنویس”کی حکومت ا قتدار میں آنے کے بعد ایک سازش کے تحت یہ تحٖفظ کو ختم کردیا گیا ہے ۔ جس سے ریاست مہاراسٹرا کے ہر سرکاری محکمہ میں مسلم عہدیداروں کی قلت دیکھی جارہی ہے جس کے خلاف 28جنوری کو مستقر چندراپور میں ایک احتجاجی ریالی منعقد کی جارہی ہے جلسہ میں شریک تمام مسلمانوں سے اپیل کی کہ وہ اس ریالی میں کثیر تعداد میں شریک ہوکر”رویندر فرنویس”حکومت پر دباو ڈالنے کیلئے نکالے جارہے اس ریالی کو کامیاب بنائیں۔اس موقع پر اس جلسہ میں کیرامیری ،جینور،آصف آباد، عاد ل آباد،چندراپورضلع کے کئی مواضعات کے سیکڑوں مسلمان شریک تھے ۔اس مو قع پر مجلس تحفظ ختم نبوت تعلقہ جیوتی کے ناظر سید منیر احمد ،مجلس تحفظ ختم نبوت نظام آباد کے ناظر حافظ اکبر کے علاوہ دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT