Saturday , November 25 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کیلئے سدھیر کمیٹی رپورٹ کے بعد بی سی کمیشن میں جائزہ لیا جائیگا

مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کیلئے سدھیر کمیٹی رپورٹ کے بعد بی سی کمیشن میں جائزہ لیا جائیگا

حیدرآباد۔/14نومبر، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے دعویٰ کیا کہ ورنگل لوک سبھا حلقہ کے ضمنی چناؤ میں ٹی آر ایس امیدوار پی دیاکر کو بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل ہوگی۔ ورنگل کی انتخابی مہم میں حصہ لینے کے بعد ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ تمام 7اسمبلی حلقوں میں ٹی آر ایس کے حق میں رائے دہندوں میں جوش و خروش پایا جاتا ہے اور اپوزیشن جماعتیں عوامی تائید حاصل کرنے میں ناکام ہوچکی ہیں۔ محمود علی نے کہا کہ ورنگل کے اقلیتی رائے دہندے مکمل طور پر ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں اور وہ حکومت کی جانب سے اقلیتوں کی بھلائی کے سلسلہ میں شروع کی گئی مختلف اسکیمات سے کافی خوش ہیں۔ انہوں  نے کہا کہ کانگریس اور بی جے پی کو مقامی طور پر کوئی امیدوار دستیاب نہیں ہوسکا لہذا دیگر علاقوں سے تعلق رکھنے والے قائدین کو امیدوار بنایا گیا ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ ان پارٹیوں کے مقامی قائدین خود بھی اپنے امیدواروں کی کامیابی کے بارے میں مطمئن نہیں ہیں۔ محمد محمود علی نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت اقلیتوں کی بھلائی اور ترقی کے سلسلہ میں کئے گئے وعدوں کی تکمیل میں سنجیدہ ہے۔ حکومت نے کئی ایسی اسکیمات کا آغاز کیا جن کا انتخابی منشور میں ذکر نہیں کیا گیا تھا۔ انہوں نے شادی مبارک اسکیم کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ابھی تک 23000 سے زائد غریب اقلیتی لڑکیوں کی شادی کیلئے امداد جاری کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتیں حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں اور انتخابی مہم کے دوران اقلیتوں  نے انہیں ٹی آر ایس کی مکمل تائید کا یقین دلایا ہے۔ محمود علی نے کہا کہ اقلیتوں کے ساتھ اجلاس میں انہوں نے مسلم تحفظات کے مسئلہ پر حکومت کے موقف کی وضاحت کی۔ انہوں نے بتایا کہ سدھیر کمیشن آف انکوائری سے جلد از جلد رپورٹ حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے جس کے بعد بیاک ورڈ کلاسیس کمیشن قائم کیا جائے گا۔ بی سی کمیشن اس رپورٹ کا جائزہ لے گا اور پھر اپنے طور پر سروے کرتے ہوئے حکومت کو سفارشات پیش کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت مسلمانوں اور درج فہرست قبائیل کو 12فیصد تحفظات کی فراہمی میں سنجیدہ ہے اور وہ اس پر باآسانی عمل آوری کیلئے قانونی راہیں تلاش کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کے ضمنی چناؤ میں اپوزیشن جماعتوں کے امیدواروں کی ضمانت بھی نہیں بچ پائے گی۔

TOPPOPULARRECENT