Monday , December 11 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کی فراہمی میں ٹی آر ایس حکومت ناکام

مسلمانوں کو 12فیصد تحفظات کی فراہمی میں ٹی آر ایس حکومت ناکام

سنگاریڈی میں سابق رکن اسمبلی جئے پرکاش ریڈی کی پریس کانفرنس
سنگاریڈی17 ؍ اکٹوبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تلنگانہ حکومت ریڈی طبقہ کو کمزور کرنے کی کوشش کر رہی ہے ۔ تحریک تلنگانہ میں بڑ ھ چڑھ کر حصہ لینے والے تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیرمین پروفیسر کودنڈا رام بھی ریڈی ہیں ۔اس لئے تلنگانہ حکومت کے وزیر اعلی کے ۔ چندر شیکھر رائو جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیرمین پروفیسر کودنڈا رام کے خلاف ہے۔ان خیالات کا اظہار سابق رکن اسمبلی سنگاریڈی ٹی جئے پرکاش ریڈی نے اپنے قیامگاہ پر منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ آزادی کے بعد سے کانگریس قائدین کی جانب سے علیحدہ تلنگانہ کیلئے جد وجہدکی جا رہی تھی لیکن سا ل 2000 میں علیحدہ تلنگانہ کے قیام کیلئے تمام سیاسی پارٹیوں کا ایک فورم بنایا گیا تھا دریں اثنا ء کے سی آر نے تلگو دیشم حکومت میں عہدئہ وزارت نہ ملنے کی وجہ سے ٹی آر ایس پارٹی قائم کی تھی اور جب سے ایک غیر سیاسی پلیٹ فارم جے اے سی (تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی ) کا پروفیسر کودنڈا رام کو چیرمین بنایا گیا تب سے ہی تمام مذاہب کے ماننے والے ‘ دانشواران‘ طلباء ‘ خواتین ‘ ملا زمین سرکار ‘ وکلاء ‘ اساتذہ و لکچررس اور سماج کے تمام طبقات کے افراد تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی میں شامل ہو تے گئے اور تحریک تلنگانہ میں بڑ ھ چڑھ کر حصہ لیتے ہوئے علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل میں کلیدی رول ادا کیا ۔انہو ں نے کہا کہ تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے قیام کیلئے وزیر اعلی کی کوئی دلچسپی نہیں تھی ۔ریاست تلنگانہ کے عوام میں علیحدہ ریاست تلنگانہ کی قیام کی صورت میں سنہرے تلنگانہ کا جو خواب دیکھا تھا اور وعدوں کی عدم عمل آوری کی وجہ سے تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے چیرمین پروفیسر کودندارام اپنی شد ید ناراضگی کا اظہار کر تے ہوئے تلنگانہ حکومت کے خلاف مہم چلا رہے ہیں۔جس کی وجہ حکومت انہیں گرفتار کر رہی ہے ۔تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوانو ں کو ملا زمتیں حاصل نہیں ہو رہی ہیں کسانوں کو پانی فراہم نہیں کیا جا رہا ہے اور 12 فیصد مسلم تحفظات کی فراہمی میں ٹی آر ایس حکومت ہنوز ناکام ہو چکی ہے ۔اور پروفیسر کودنڈا رام حکومت کی ان ناکامیوں کو مختلف مقامات پر جاکر عوامی شعور بیدار کر رہے ہیں۔جس کی وجہ سے انہیں حراست میں لیا جا رہا ہے۔ جبکہ کودنڈا رام کا کسی سیاسی پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے اگر اسی طرح انہیں گرفتار اور حراساں کرنے کی صورت میں تلنگانہ حکومت کو عوام کے غیض و غضب کا سامنا کرنا پڑ یگا۔انہوں نے کہا کہ حلقہ اسمبلی سنگاریڈی کے مو ضع کلبگور کے تقریباً 50 نوجوانوں نے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کر چکے ہیں۔

 

TOPPOPULARRECENT