Sunday , November 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا مطالبہ

مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا مطالبہ

مسجد قادریہ نظام آباد میں بعد نماز جمعہ دستخطی مہم
نظام آباد:12؍ فروری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)قیام تلنگانہ کی جدوجہد میں تلنگانہ کی اقلیتوں نے بھی اپنا اٹوٹ حصہ ادا کیا۔ حصول تلنگانہ کیلئے اس کے تمام ضلعوں اور منڈلوں پرپروگرامس منعقد کئے گئے بالخصوص نظام کالج گرائونڈ پر تلنگانہ گرجنا منعقد کرتے ہوئے اس بات کا ثبوت فراہم کیا کہ مسلمانوں تلنگانہ بھی اس علاقہ کا اٹوٹ حصہ ہے۔قیام آندھراپردیش کے وقت اقلیتوں کو جتنے نقصانات سے گذرنا پڑا دیگر طبقات کو ایسی کوئی دشواری پیش نہیں آئی۔ موجودہ حالت میں مسلم اقلیتیں تلنگانہ میں معاشی سماجی سیاسی تعلیمی پسماندگی کا شکار ہے ۔ اور اس بات سے تلنگانہ سرکار بخوبی واقف ہے انہی حالات کے تناظر میں وزیراعلیٰ نے 12فیصد تحفظات دینے کا وعدہ کرکے اقتدار پر فائز ہوگئے تاحال تحفظات کی فراہمی میں ناکام رہے۔ مائناریٹی سب پلان 12ریزرویشن ایکشن کمیٹی اس بات کا مطالبہ کرتی ہے کہ تلنگانہ سرکار جلد از جلد بی سی کمیشن قائم کرتے ہوئے تحفظات کی فراہمی کی راہ ہموار کرے۔روزنامہ سیاست کی جانب سے شروع کردہ 12 فیصد کی تحریک کا اثر ضلع نظام آباد میں دن بہ دن اثر ہوتا جارہا ہے۔ اسی ضمن میں آج بعدنمازجمعہ مسجد قادریہ مستعیدپورہ نظام آباد پر دستخطی مہم پروگرام کا اہتمام کیاگیا مذکورہ پروگرام میں صدر سینئر سٹیزنس ویلفیئر سوسائٹی عبدالشکور ، سکریٹری فیاض الدین، شیخ علی، ویلفیئر پارٹی آف انڈیا کے ضلعی صدر محمد انور خان، ڈاکٹر احتشام اللہ، محمد غوث ، کانگریس پارٹی کے اقلیتی صدر سمیر احمد، اعجاز مسعود، علاوہ ازیں ٹی ڈی پی عبدالمنان ضلعی صدر، اعجاز ہزاری، محمد خلیل ، مسلم لیگ کے ذمہ داران عبدالغنی،عبدالمقیت سابق کارپوریٹر، شرجیل پرویزودیگر نے پروگرام میں حصہ لیتے ہوئے عوامی شعور بیدار ی کا کام انجام دیا۔ اس موقع پر ذمہ داران مسجد کمیٹی محمد سعداللہ، ڈاکٹر محمد صمدانی، نور الدین، محمدخواجہ،عبدالمستان ودیگرنے اپنے دستخط ثبت کئے۔کل جماعتی قائدین نے عوام میں شعور بیدار کرتے ہوئے تحفظات کی اہمیت پر روشنی ڈالی تمام اقلیتوں سے پُرزور مطالبہ کیا کہ تلنگانہ سرکار جلدازجلد تحفظات کی فراہمی کیلئے سنجیدہ کوششوں کا آغاز کرے۔

TOPPOPULARRECENT