Wednesday , November 22 2017
Home / Top Stories / مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کی تائید میں ایک ملین دستخطوں کا نشانہ

مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کی تائید میں ایک ملین دستخطوں کا نشانہ

سدھیر کمیشن کے نام پر کے سی آر کی بہانہ بازی ، دستخطی مہم کو تلنگانہ بھر میں توسیع دینے اتم کمار کو ڈگ وجئے سنگھ کا مشورہ

٭ انتخابی وعدوں کو پورا کرنے چیف منسٹر پر دباؤ بنانے کی خواہش
٭ مسلم تحفظات کیلئے نوجوان طبقہ اور طلباء میں جوش و خروش کی ستائش

حیدرآباد۔ /12 اپریل (سیاست نیوز) جنرل سکریٹری آل انڈیا کانگریس کمیٹی و انچارج تلنگانہ کانگریس امور مسٹر ڈگ وجئے سنگھ نے 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے کانگریس کی جانب سے شروع کردہ دستخطی مہم کو ریاست تلنگانہ میں توسیع دینے کا صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی کو مشورہ دیا ۔ صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل کی قیام مگاہ پر دستخطی مہم پوسٹر کے رسم اجراء کے بعد خود بھی 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے اپنی دستخط کی ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر اور ورکنگ پریسڈینٹ تلنگانہ کانگریس کمیٹی مسٹر ملوبٹی وکرامارک کے علاوہ دوسرے قائدین نے بھی اپنی اپنی دستخط کرتے ہوئے 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے اپنی مکمل تائید و حمایت کا اعلان کیا ۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی بھی موجود تھے ۔ شہر حیدرآباد میں 12 فیصد مسلم تحفظات کیلئے دستخطی مہم میں عوام کی بھرپور تائید پر ڈگ وجئے سنگھ نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے اس مہم کو سارے تلنگانہ میں توسیع دینے اور کامیاب بناتے ہوئے مسلمانوں سے کئے گئے وعدے کو پورا کرنے کیلئے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر پر دباؤ بنانے کا کیپٹن اتم کمار ریڈی کو مشورہ دیا ۔ جس پر صدر پردیش کانگریس کمیٹی نے رضامندی کا اظہار کیا ۔ ایمپرئیل گارڈن میں منعقدہ امبیڈکر جینتی تقریب میں شرکت کے بعد مسٹر ڈگ وجئے سنگھ ، مسٹر شیخ عبداللہ سہیل کی قیامگاہ بازار گھاٹ پہونچے جس کا مقامی کانگریس قائدین کی جانب سے شاندار استقبال کیا گیا ۔ شیخ عبداللہ سہیل نے ڈگ وجئے سنگھ کو بتایا کہ 10 لاکھ دستخطیں حاصل کرنے کا منصوبہ کے ساتھ /4 اپریل کو گاندھی بھون میں دستخطی مہم کا آغاز کیا گیا ۔ ابھی تک 12 فیصد مسلم تحفظات کی تائید میں 4 لاکھ دستخطیں حاصل کی گئی ہیں ۔ مسلم تحفظات کیلئے عوام میں بالخصوص نوجوان طبقہ اور طلبہ میں کافی جوش و خروش پایا جاتا ہے ۔ صرف گزشتہ جمعہ کو ایک لاکھ دستخطیں حاصل کی گئی ہیں ۔ طلبہ رضاکارانہ طور پر کالجس میں دستخطی مہم چلارہے ہیں ۔ سوشیل میڈیا بالخصوص واٹس اپ اور فیس بک پر بھی عوام اپنی بھرپور تائید کا اظہار کررہے ہیں جو 2 سال قبل /19 اپریل کو چیف منسٹر نے ٹی آر ایس اقتدار میں آنے کے 4 ماہ میں مسلمانوں کو 12 فیصد مسلم تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ کانگریس پارٹی /19 اپریل تک 10 لاکھ دستخطیں حاصل کرنے کے نشانے کو عبور کرلے گی ۔ ڈگ وجئے سنگھ نے کہا کہ ٹی آر ایس نے اپنے انتخابی منشور کے ذریعہ مسلمانوں کو 12 فیصد مسلم تحفظات فراہم کرنے وہ بھی 4 ماہ میں فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ٹی آر ایس اقتدار کے 22 ماہ مکمل ہوچکے ہیں ۔ چیف منسٹر کی ذمہ داری وہ اپنے انتخابی وعدے پر جلد از جلد عمل آوری کرتے ہوئے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کریں تاکہ انہیں تعلیم اور ملازمتوں میں زیادہ سے زیادہ فائدہ ہوسکے ۔ وعدے پر عمل آوری کے بجائے ٹی آر ایس حکومت ٹال مٹول کی پالیسی اپناتے ہوئے قیمتی وقت ضائع کررہی ہے ۔ مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کیلئے بی سی کمیشن تشکیل دینے کے بجائے سدھیر کمیشن تشکیل دیتے ہوئے مگر مچھ کے آنسو بہارہی ہے ۔ جس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے اور نہ ہی اس کمیشن کو مسلمانوں کو 12 فیصد مسلم تحفظات فراہم کرنے کی تجویز پیش کرنے کا اختیار ہے ۔ اگر ٹی آر ایس حکومت مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کیلئے سنجیدہ ہے تو ٹھوس عملی اقدامات کریں بیان بازی سے مسلمانوں کو دھوکہ دینے کی کوشش نہ کریں ۔ ڈگ وجئے سنگھ نے کانگریس کے تمام قائدین کو اس تحریک میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے اور تحریک کو کامیاب بنانے پر زور دیا ۔ دستخطی مہم شروع کرنے پر صدر گریٹر حیدرآباد کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر شیخ عبداللہ سہیل کی ستائش کی اور تحریک کی تائید کرنے والے عوام سے اظہار تشکر بھی کیا ۔ اس موقع پر حیدرآباد سٹی کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری مسٹر سید نظام الدین کانگریس کے سینئر قائد وجئے نائیڈو کے علاوہ دوسرے قائدین بھی موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT