Thursday , January 18 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کے اعلان پر بی جے پی کی تنقید

مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کے اعلان پر بی جے پی کی تنقید

کسانوں کے زرعی قرض معافی کا وعدہ پورا کرنے پر زور : کشن ریڈی کا بیان

کسانوں کے زرعی قرض معافی کا وعدہ پورا کرنے پر زور : کشن ریڈی کا بیان
حیدرآباد 15 جون ( آئی این این ) تلنگانہ بی جے پی کے صدر مسٹر جی کشن ریڈی نے مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے حکومت کے اعلان پر تنقید کی اور کہا کہ مسلمانوں کو چار فیصد تحفظات کی فراہمی کا مسئلہ ہی پہلے سے سپریم کورٹ میں زیر دوران ہے اور اب ٹی آر ایس حکومت 12 فیصد کوٹہ فراہم کرنے کی بات کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی مذہب کی بنیاد پر تحفظات فراہم کرنے ٹی مخالف ہے ۔ انہوں نے تاہم کہا کہ ان کی پارٹی غریب مسلمانوں کو تحفظات فراہم کرنے کی مخالفت نہیں کریگی ۔ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر کشن ریڈی نے ٹی آر ایس حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ کسانوں کے فصل قرض معاف کرنے کے اپنے وعدہ پر عمل کرے ۔ انہوں نے کہا کہ اب خریف سیزن آچکا ہے اور کسان اس بات پر فکر مند ہیں کہ ان کے زرعی قرض معاف کرنے میں حکومت تاخیر کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک پرانے قرض چکتا نہیں کئے جاتے اس وقت تک بینکوں کی جانب سے نئے قرض جاری نہیں کئے جائیں گے ۔ اس لئے انہوں نے ریاستی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اس سلسلہ میں فوری اقدامات کرتے ہوئے کسانوں کو راحت پہونچائے ۔ انہوں نے حکومت سے کہا کہ وہ کسانوں کو بہتر معیار کے بیج بھی فراہم کرے ۔ مسٹر کشن ریڈی نے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے مطالبہ کیا کہ وہ یہ واضح کریں کہ وہ توانائی کے بحران کو کس طرح حل کرینگے ۔ واضح رہے کہ چندر شیکھر راؤ نے یہ اعلان کیا تھا کہ آئندہ تین تا چار برسوں میں تلنگانہ میں ضرورت سے زیادہ برقی تیار کی جائیگی ۔ مسٹر ریڈی نے مطالبہ کیا کہ حکومت کو اس مسئلہ پر تفصیلی بیان جاری کرنے کی ضرورت ہے ۔ پولاورم پراجیکٹ مسئلہ پر انہوں نے کہا کہ کھمم ضلع کے سات منڈلوں کو سیما آندھرا میں ضم کرنے کے تعلق سے آرڈیننس سابقہ یو پی اے حکومت نے تیار کیا تھا اور بی جے پی حکومت نے صرف اس کی اجرائی عمل میں لائی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ایسے میں بی جے پی حکومت کو مورد الزام ٹہرانا درست نہیں ہے ۔ انہوں نے ٹی آر ایس پر مرکز کی بی جے پی حکومت کے ساتھ متصادم رویہ اختیار کرنے کا الزام ع

TOPPOPULARRECENT