Saturday , December 16 2017
Home / اضلاع کی خبریں / مسلمانوں کیلئے 12 فیصد تحفظات پر عمل آوری ضروری

مسلمانوں کیلئے 12 فیصد تحفظات پر عمل آوری ضروری

کریم نگر میں تہنیتی تقریب سے فخرالدین کا خطاب
کریم نگر /17 اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) تلنگانہ ریاست کا قیام عمل میں آکر دیڑھ سال ہونے کو ہے ۔ کے سی آر نے الیکشن کے دوران جو وعدے کئے تھے بالخصوص مسلمانوں کی فلاح و بہبود کے تعلق سے 12 فیصد تحفظات کا وعدہ کیا تھا ۔ اس پر ٹال مٹول سے کے سی آر کی نیت اور دروغ گوئی ظاہر ہورہی ہے ۔ انہوں نے محض اقتدار کے حصول کیلئے ناقابل عمل وعدے کئے تھے اور عوام کو گمراہ کیا تھا۔ ٹی پی سی سی اقلیتی شعبہ ریاستی صدر فخرالدین نے ان خیالات کا اظہار کیا ۔ کریم نگر میں بلاک کانگریس صدر سید غازی الدین کی رہائش گاہ پر ان کے اعزاز میں منعقدہ خیرمقدمی تہنیتی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ کے تمام اضلاع کا دورہ کرکے مسلمانوں سے ملاقات کرتے ہوئے موجودہ حالات کا جائزہ لیا جارہا ہے ۔ مسلمانوں کے ریاست تلنگانہ میں درپیش مسائل کی یکسوئی ، سماجی انصاف کے حصول کیلئے منصوبہ بندی کی جارہی ہے ۔ اس سلسلہ میں کے سی آر نے مسلمانوں کو تعلیم اور ملازمتوں میں 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ ریاست میں ملازمتوں پر تقررات کا سرکاری اعلامیہ جاری ہوچکا ہے ۔ اس لئے مسلمانوں کیلئے 12 فیصد تحفظات پرعمل آوری ضروری ہے ۔ کے سی آر عوام کی توجہ ہٹانے کیلئے نت نئے پروگراموں کا اعلان کر رہے ہیں جوکہ سابقہ حکومتوں میں ہی شروع کردہ اسکیمات کا نام بدل کر اسے اپنا پروگرام کہہ رہے ہیں ۔ ریاست تلنگانہ صدر کانگریس سونیا گاندھی کی دین ہے ۔ لیکن کانگریس کی بدبختی یا حد سے زیادہ بھروسہ تھا جس کا تلخ تجربہ ہوچکا ہے اور ٹی آر ایس کے ساتھ تلنگانہ کے مخالفین بھی اقتدار کا مزہ اٹھارہے ہیں ۔ عوام کی خوشحالی بہبود کے نقطہ نظر سے تلنگانہ قائم کیا گیا تاہم کے سی آر کا خاندان اور پارٹی رفقاء مستفید ہو رہے ہیں ۔ مسلمان کانگریس کے ساتھ رہے ہیں لیکن گمراہ کن پروپگنڈہ کی وجہ سے کچھ دوری اختیار کئے ہیں ۔ اب کے سی آر ائمہ کو معمولی رقم غریبوں کو کپڑے اور افطار پارٹیوں کے ذریعہ مسلمانوں کو بہلا رہے ہیں ۔ ریاست میں کے سی آر اور مرکز میں مودی حکومت مسلمانوں کے خلاف ہیں۔ مودی نے بھی بہت وعدے کئے لیکن سبھی کو بھلاکر بیرونی ممالک کے دورے کر رہے ہیں ۔ اس موقع پر مسلم قائدین جمیل الدین تاج عبدالرحمن مخدوم علی عقیل لئیق پاشاہ ، کلیم عمران وغیرہ موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT