Friday , September 21 2018
Home / Top Stories / مسلمانوں کی سیاسی غفلت پریشانیوں و مشکلات کا باعث بن سکتی ہے

مسلمانوں کی سیاسی غفلت پریشانیوں و مشکلات کا باعث بن سکتی ہے

جوبلی ہلز کے شیخ پیٹ ڈیویژن میں وائی ایس آر سی پی آفس کا افتتاح، جناب عامر علی خاں کوآرڈینیٹر حلقہ پارلیمنٹ کا خطاب

جوبلی ہلز کے شیخ پیٹ ڈیویژن میں وائی ایس آر سی پی آفس کا افتتاح، جناب عامر علی خاں کوآرڈینیٹر حلقہ پارلیمنٹ کا خطاب

حیدرآباد 20 مارچ (سیاست نیوز) ملک میں مسلمانوں کی سیاسی بیداری مستقبل کی تعمیر میں اہم رول ادا کرسکتی ہے اور مسلمانوں کی سیاسی غفلت پریشانیوں و مشکلات کا باعث بن سکتی ہے۔ ان خیالات کااظہار جناب عامر علی خاں قائد وائی ایس آر پارٹی نے کیا۔ انہوں نے آج یہاں جوبلی ہلز اسمبلی حلقہ کے شیخ پیٹ ڈیویژن میں پارٹی آفس کا افتتاح کیا بعدازاں انہوں نے شیخ پیٹ ڈیویژن میں پارٹی کارکنوں سے ملاقات کی اور علاقہ کے حالات کا تفصیلی جائزہ لیا۔ اس موقع پر شیخ پیٹ ڈیویژن کی عوام نے بلا لحاظ مذہب جناب عامر علی خاں کا استقبال کیا اور ان کی آمد پر مسرت کا اظہار کیا۔ جگن یوا سینا نے جناب عامر علی خاں کی بھر پور تائید کا اعلان کیا اور چناؤ میں سرگرم رول ادا کرنے کا تیقن دیا۔ اس موقع پر پارٹی آفس میں مخاطب کرتے ہوئے جناب عامر علی خاں نے کہا کہ موجودہ انتخابات ملک کے مستقبل کیلئے فیصلہ کن ہیں اور مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ ایسے دور میں اپنے حقیقی ہمدرد کا صحیح انتخاب کریں چونکہ ووٹ جیسے سیکولر حق کے صحیح استعمال سے مسلمان اپنا مقام بناسکتے ہیں اور بغیر سیاسی شعور کے مسلمان مشکل حالات سے مقابلہ نہیںکرسکتے ۔ انہوں نے کہا کہ اس مقصد کے تحت انہوں نے ملت کے مسائل کی یکسوئی کیلئے سیاست میں قدم رکھا ہے اور سرگرم ہوگئے ہیں۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں مرکزی و ریاستی حکومتوں کی جانب سے مسلم اقلیت کیلئے بجٹ منظور کیا جاتا ہے

لیکن آج تک مختص کردہ بجٹ کا مکمل استعمال نہیں ہوا اور نہ ہی اس جانب حکومت کی توجہ دلانے والا کوئی ہے اور نہ ہی اس استحصال کوروکنے کی کسی نے کوشش کی ہے۔ اس کے بر خلاف ہزارہا کروڑ کی اوقافی املاک کو نقصان پہونچایا گیا۔ جناب عامر علی خاں جلسہ میں اپنی اس سفارش کی یاد تازہ کی جب انہوں نے ریاستی حکومت سے کہا تھا کہ وہ 5 سو کروڑ کے وقف ہاوزنگ بورڈکارپوریشن کا قیام عمل میں لائے چونکہ جسٹس راجندر سنگھ سچر کمیٹی رپورٹ کے مطابق ملک میں مسلمانوں کی کل آبادی کا صرف ڈھائی فیصد حصہ ہی اپنے ذاتی مکانوں میں رہتا ہے جبکہ 40 فیصد سے زائد کرایہ کے مکانات اور باقی مسلمانوں کو چھت تک میسر نہیں۔ انہو ںنے کہا کہ وہ سکندرآباد کے ہر حلقہ میں کاٹیج انڈسٹری کے قیام کا منصوبہ رکھتے ہیں تا کہ ہر ڈیویژن میں اقلیتوں کیلئے خود روزگار کے مواقع فراہم کئے جائیں۔ انہوں نے بتایا کہ اقلیتی نوجوانوں کو تعلیمی اور ٹکنیکی طور پر با صلاحیت بنانے اور مسلم خواتین کیلئے مکمل پردہ میں رہتے ہوئے خود روزگار کے مواقع فراہم کئے جائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جوبلی ہلز حلقہ میں پینے کے پانی کا تک صحیح انتظام نہیں۔ جناب عامر علی خاں نے عوام سے ملاقات بالخصوص اقلیتوں میں سیاسی دور اندیشی کو خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ اقلیتیں یہ جان چکی ہیں کہ ان کے ووٹ کا استعمال کس کے حق میں کارآمد ہوگا اور کس مقام پر ان کا ووٹ ضائع ہوگا۔ انہوں نے مسلمانوں کو الزام تراشی سے گریز کرنے اور تعمیری رول ادا کرنے کا مشورہ دیا ۔ اس موقع پر مسٹر وجئے ریڈی جوبلی ہلز اسمبلی حلقہ انچارج نے جوبلی ہلز کو مثالی حلقہ بنانے کا وعدہ کیا اور سابق رکن اسمبلی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔ اس موقع پر رفیق پٹیل ،شجاعت علی کے علاوہ نوین گوڑ و دیگر نے بھی مخاطب کیا ۔ اس موقع پر ایوب خان، شاہد، اختر زنگی ، ٹی بیگ ، محمد و دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT