Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلمانوں کی نوخیز نسل میں حصول علم کا شوق خوش آئند

مسلمانوں کی نوخیز نسل میں حصول علم کا شوق خوش آئند

حیدرآباد ۔ /22 اکٹوبر (سیاست نیوز) ہندوستانی مسلمان تعلیمی و معاشی لحاظ سے اگرچہ انتہائی پسماندہ ہیں لیکن مسلم لڑکے لڑکیاں کافی ذہین اور ہونہار ہیں ۔ ان کی بہتر انداز میں رہنمائی کی جائے ان کیلئے آگے بڑھنے کے ذرائع مواقع پیدا کئے جائیں تو وہ بڑی تیزی کے ساتھ کامیابی و کامرانی کی راہ پر گامزن ہوسکتے ہیں ۔ ہندوستانی مسلمانوں کو مایو

حیدرآباد ۔ /22 اکٹوبر (سیاست نیوز) ہندوستانی مسلمان تعلیمی و معاشی لحاظ سے اگرچہ انتہائی پسماندہ ہیں لیکن مسلم لڑکے لڑکیاں کافی ذہین اور ہونہار ہیں ۔ ان کی بہتر انداز میں رہنمائی کی جائے ان کیلئے آگے بڑھنے کے ذرائع مواقع پیدا کئے جائیں تو وہ بڑی تیزی کے ساتھ کامیابی و کامرانی کی راہ پر گامزن ہوسکتے ہیں ۔ ہندوستانی مسلمانوں کو مایوس ہونے کی ضرورت نہیں بلکہ اپنے بچوں کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار دہلی کے آزاد میدان علاقہ میں سیاست ریلیف فنڈ اور تعمیر ٹرسٹ کے زیراہتمام مشترکہ طور پر چلائے جارہے

تعلیمی ادارے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایڈیٹر سیاست جناب زاہد علی خان نے کیا ۔ دہلی کے ممتاز چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ اور ملی ہمدردی کا جذبہ رکھنے والی شخصیت جناب عبدالحنان نے جو خود تعمیر ٹرسٹ کے صدر ہیں اپنی 2000 مربع فٹ کی عمارت مسلم لڑکے لڑکیوں کی مفت تربیت کیلئے فراہم کی ہے اس طرح دونوں اداروں تعمیر اور سیاست ریلیف فنڈ نے تعمیر ۔ ملت ٹرسٹ کی شکل اختیار کی ہے ۔ تعمیر ۔ ملت ٹرسٹ کی جانب سے چلائے جارہے مفت ادارہ میں مسلم بچے بچیوں کو اسپوکن انگلش ، کمپیوٹر ، دینیات و اخلاقیات کی تربیت دی جارہی ہے ۔ مسلم بچے بچیوں کو عربی بھی سکھائی جارہی ہے ۔ فی الوقت وہاں 150 طلبہ کو مختلف کورسس کی تعلیم دی جارہی ہے ۔ ان میں 34 غیر مسلم طلبہ ہیں ۔ ان طلبہ کی خواہش پر یکم نومبر سے انہیں اردو سکھانے کا بھی انتظام کیا جارہا ہے ۔ جناب زاہد علی خان نے اپنے سلسلہ خطاب جاری رکھتے ہوئے پرزور انداز میں کہا کہ مسلم والدین کو چاہئیے کہ اپنے بچوں کو تعلیم دلائیں اس لئے کہ تعلیم کے بناء آج کے ہی دور میں نہیں بلکہ ہر دور میں کسی قوم نے ترقی نہیں کی بلکہ جس قوم نے خود کو زیور تعلیم سے آراستہ کیا کامیابیوں نے آگے بڑھکر اس کے قدم چومے ،

ایسا ہی کچھ عربوں کے ساتھ ہوا تھا ۔ عرب تعلیمی شعبہ میں اس قدر آگے ہوئے تھے کہ زندگی کے ہر شعبہ میں وہ چھاگئے تھے ، پیشہ طب ، جہاز رانی ، فضائیہ ، علم فلکیات غرض ہر شعبے میں عربوں نے بہت محنت کی ، سائنس کو عربوں کے باعث ہی ایک نئی جہت عطا ہوئی ۔ آج یوروپ میں جو تعلیمی انقلاب برپا ہوا ، ترقی کے جو نظارے دیکھے جارہے ہیں وہ سب کچھ عربوں کے علم سے یوروپی اقوام کے استفادہ حاصل کرنے کا نتیجہ ہے ۔ جناب زاہد علی خان نے مسلمانوں کو عصری تقاضوں سے ہم آہنگ رکھنے کا مشورہ دیتے ہوئے یہ بھی کہا کہ آج انفارمیشن ٹکنالوجی کا دور ہے ۔ ایسے میں مسلم بچے بچیوں کو کمپیوٹرس سے اچھی طرح واقف رہنا ہوگا ۔ انگریزی اور دوسری زبانوں پر عبور حاصل کرنا پڑے گا ۔ تقریب میں ادارہ میں مختلف کورسس کررہی طالبات نے بھی تقاریر کیں ۔ پلمبر کی حیثیت سے کام کرنے والے ایک

صاحب کی دو لڑکیوں نے بڑے ہی خوبصورت انداز میں تقاریر کیں جنہیں سن کر نہ صرف جناب زاہد علی خان ، جناب ظہیر الدین علی خان ، ڈاکٹر معین انصاری ، شاہد انصاری ، فیض عام ٹرسٹ کے سکریٹری جناب افتخار حسین صاحب اور فیض عام ٹرسٹ کے ٹرسٹی جناب رضوان حیدر حیران رہ گئے بلکہ خوشی کا اظہار کرتے ہوئے مسلمانوں کی نوخیز نسل کی صلاحیتوں پر اللہ عزوجل کا شکریہ ادا کیا ۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بیجا نہ ہوگا کہ اس مفت کوچنگ سنٹر میں جو سرفراز احمد کی نگرانی میں چلایا جارہا ہے امید ہے کہ آئندہ دو تا تین ماہ میں طلباء و طالبات کی تعداد 500 تک جاپہنچے گی ۔ تقریب سے سکریٹری فیض عام ٹرسٹ جناب افتخار حسین نے جناب رضوان حیدر ، ڈاکٹر معین انصاری اور ان کی اہلیہ نے بھی خطاب کرتے ہوئے خوشی کا اظہار کیا کہ مسلمانوں کی نوخیز نسل تعلیم میں غیرمعمولی دلچسپی کا اظہار کررہی ہے ۔ اگر بچوں میں اس طرح کا شوق رہا تو وہ دن دور نہیں جب تعلیمی میدان میں مسلمان پسماندہ نہیں رہیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT