Wednesday , December 13 2017
Home / Top Stories / مسلمانوں کی پستی کے خاتمہ کیلئے %12 تحفظات کی فراہمی ضروری

مسلمانوں کی پستی کے خاتمہ کیلئے %12 تحفظات کی فراہمی ضروری

بی سی کمیشن سے اضلاع کا بھی دورہ کرنے اور جامع رپورٹ پیش کرنے کانگریس کی اپیل
حیدرآباد۔18ڈسمبر(سیاست نیوز) صدر تلنگانہ کانگریس کمیٹی اتم کمار ریڈی نے ریاست تلنگانہ میں مسلمانوں کو تعلیمی اورمعاشی پسماندگی کی بنیاد پر تحفظات فراہم کرنے کی اپیل کی۔ آج یہاں حکومت تلنگانہ کی جانب سے قائم کردہ بی سی کمیشن سے نمائندگی کے دوران انہوںنے بی سی کمیشن کے قیام کا خیر مقدم کرتے ہوئے چیرمن کمیشن کے بشمول تمام اراکین کو تلنگانہ کانگریس کمیٹی کی جانب سے مبارکباد بھی پیش کی۔ اتم کمار ریڈی نے بی سی کمیشن کے قیام میں تاخیر پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اقتدار حاصل ہونے کے اندرون چار ماہ مسلمانو ں کو بارہ فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کرنے والی ریاست میںبرسراقتدار حکومت نے کمیشن کے قیام کیلئے ڈھائی سال کاعرصہ لگادیا۔انہوں نے کہاکہ ریاست تلنگانہ میںمسلمانوں کی حالت نہایت ابتر ہے اور بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی سے مسلمانوں کی تعلیمی اور معاشی پسماندگی میںبڑی حدتک تبدیلی ممکن ہے ۔ اتم کمار ریڈی چیرمن کمیشن سے اصرار کیا کہ وہ پسماندگی کی بنیاد پر مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کو یقینی بنانے کے اقدامات اٹھائیں جس کا برسراقتدار حکومت نے اپنے انتخابی مہم کے دوران وعدہ کیاتھا۔انہوںنے کہاکہ کمیشن کے سفارشات قانونی حیثیت کے حامل ہے اور کانگریس پارٹی کو امید ہے کہ بی سی کمیشن دیگر پسماندہ طبقات کو فراہم کئے جانے والے تحفظات کے تناسب کو چھیڑے بغیر مسلمانو ں کو بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی عمل میںلاتے ہوئے مسلمانوں کی حالت زار میں سدھار لایا جائے ۔لیڈر آف اپوزیشن کونسل جناب محمد علی شبیرایم ایل سی نے کمیشن سے نمائندگی کے دوران بتایاکہ ریاست تلنگانہ میںمسلمانوں کی پسماندگی کوئی ڈھکی چھپی بات نہیںہے ۔

TOPPOPULARRECENT