Tuesday , December 12 2017
Home / Top Stories / مسلم تحفظات میں اضافہ کے مسئلہ پر تیسرا دن نمائندگیوں سے بھرپور

مسلم تحفظات میں اضافہ کے مسئلہ پر تیسرا دن نمائندگیوں سے بھرپور

ریٹائرڈ آئی اے ایس عہدیدار کی قیادت ،سوشیل انشیٹو فار لیگل ریمیڈیز کے وفد کی تحفظات کے حق میں مدلل بحث

حیدرآباد۔/16ڈسمبر، ( سیاست نیوز) مسلمانوں کے پسماندہ طبقات کو تحفظات کے فیصد میں اضافہ کے مسئلہ پر اسٹیٹ بی سی کمیشن میں آج سماعت کا تیسرا دن نمائندگیوں سے پُر رہا۔ تحفظات کے حامیوں اور مخالفین کی جانب سے شدت کے ساتھ اپنے اپنے موقف کے حق میں دلائل پیش کئے گئے۔ شہر اور اضلاع سے تعلق رکھنے والے مسلم اداروں اور تنظیموں نے تحفظات کے حق میں نمائندگی کی تو دوسری طرف اسی شدت کے ساتھ پسماندہ طبقات کی مختلف تنظیموں نے مسلمانوں کو علحدہ تحفظات کی فراہمی پر اعتراض کیا۔ بی سی تنظیموں کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کو تحفظات بی سی تحفظات کو متاثر کئے بغیر فراہم کئے جائیں۔ بعض بی سی تنظیموں نے مسلمانوں کو تحفظات کے فیصد میں اضافہ کی سفارش کی صورت میں احتجاج کی دھمکی بھی دی۔ صدرنشین بی سی کمیشن بی ایس راملو نے تین ارکان کے ساتھ تیسرے دن کی سماعت کا آغاز کیا اور سماعت کی تکمیل تک تقریباً  98نمائندگیاں وصول ہوئیں جن میں بعض انفرادی نمائندگیاں بھی شامل ہیں۔ مسلم تنظیموں اور اداروں کے علاوہ بعض سیاسی جماعتوں کے اقلیتی قائدین نے بھی کمیشن سے رجوع ہوکر مسلم تحفظات کے فیصد میں اضافہ کا مطالبہ کیا۔ سدھیر کمیشن آف انکوائری کی رپورٹ کے پس منظر میں بی سی کمیشن سے خواہش کی گئی ہے کہ وہ ایک جامع رپورٹ حکومت کو پیش کرے۔ سینئرترین ریٹائرڈ آئی اے ایس عہدیدار محمد شفیق الزماں کی قیادت میں سوشیل انشٹیو فار لیگل ریمیڈیز کے وفد نے بی سی کمیشن کے روبرو تحفظات کے حق میں مدلل بحث کی(سلسلہ صفحہ 10 پر )

TOPPOPULARRECENT