Thursday , December 14 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم تحفظات میں مزید 8 فیصد اضافہ پر زور

مسلم تحفظات میں مزید 8 فیصد اضافہ پر زور

بی سی کمیشن کی سماعت میں جناب عابد رسول خاں کی نمائندگی
حیدرآباد۔/22ڈسمبر، ( سیاست نیوز) ریاستی اقلیتی کمیشن کے صدرنشین عابد رسول خاں نے آج بی سی کمیشن سے ملاقات کی اور تلنگانہ میں مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات کے مسئلہ پر نمائندگی کی۔ عابد رسول خاں کے ہمراہ کمیشن کے ارکان سردار سرجیت سنگھ اور گوتم جین موجود تھے۔ بی سی کمیشن کو پیش کردہ یادداشت میں موجودہ 4 فیصد مسلم تحفظات میں مزید 8 فیصد کے اضافہ کی تائید کی گئی۔ اس سلسلہ میں جی سدھیر کمیشن کی رپورٹ کا حوالہ دیا گیا جس نے تحفظات کے فیصد میں اضافہ کی سفارش کی ہے۔ کمیشن کو بتایا گیا کہ سدھیر کمیشن، جسٹس رنگناتھ مشرا کمیشن اور جسٹس راجندر سنگھ کمیشن کی رپورٹس میں مسلمانوں کی تعلیمی، سماجی اور معاشی پسماندگی کا ذکر کیا گیا ہے۔ عابد رسول خاں نے اقلیتی کمیشن کی جانب سے مختلف اضلاع کے دورہ کے ذریعہ مسلمانوں کی سماجی اور معاشی حالت کے بارے میں کئے گئے سروے کی تفصیلات سے واقف کرایا۔ انہوں نے کہا کہ  4 فیصد تحفظات 14 مسلم گروپس کو فراہم کئے گئے ہیں۔ بی سی کمیشن سے کہا گیا کہ مسلمانوں کے ان طبقات کو بھی تحفظات کے زمرہ میں شامل کیا جائے جو تعلیمی اور سماجی طور پر پسماندہ ہیں۔ بی سی کمیشن سے خواہش کی گئی کہ وہ قطعی رپورٹ پیش کرنے سے قبل اپنے طور پر مسلمانوں کی پسماندگی کا جائزہ لیں اور تمام قانونی پہلوؤں کو پیش نظر رکھتے ہوئے سفارشات پیش کرے۔ بی سی کمیشن کے صدرنشین بی ایس راملو اور ارکان نے یقین دلایا کہ وہ اقلیتی کمیشن کی جانب سے پیش کی گئی تجاویز کا جائزہ لیں گے۔ اس موقع پر بی سی کمیشن کے ارکان ڈاکٹر کرشنا موہن راؤ، ڈاکٹر ای انجنئے گوڑ اور جے گوری شنکر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT