Sunday , November 19 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم تحفظات کیلئے روز نامہ ’سیاست‘ کی تحریک اضلاع میں زور پکڑ رہی ہے

مسلم تحفظات کیلئے روز نامہ ’سیاست‘ کی تحریک اضلاع میں زور پکڑ رہی ہے

منڈل سطح سے لیکر ضلعی سطح تک نمائندگیوں میں اضافہ، سرکاری ملازمتوں میں تقررات کے اعلامیہ سے قبل تحفظات کو یقینی بنانے مساعی

حیدرآباد۔/16ستمبر، ( سیاست نیوز) مسلم قوم کی ترقی اوربہبود کیلئے جاری 12فیصد مسلم تحفظات تحریک میں اضلاع کے مسلمان پیش پیش ہیں اور وہ شہری مسلمانوں پر سبقت حاصل کررہے ہیں۔ خالص مسلم سماج کی بھلائی اور مسلم نوجوان نسل کی ترقی کے نعرہ پر روزنامہ سیاست کی جانب سے شروع کردہ تحریک کو اضلاع میں زیادہ تقویت حاصل ہورہی ہے اور شہری سطح پر تحریک آہستہ زور پکڑ رہی ہے تاہم تقررات کیلئے تحفظات کا نعرہ ہر سمت گونج رہا ہے۔ ضلعی سطح پر مسلمان منڈل، ڈیویژن اور ضلعی سطح پر نمائندگیاں پیش کرنے میں سبقت حاصل کررہے ہیں اور عوامی منتخبہ نمائندوں سے بھی ملاقاتیں جاری ہیں۔ سرکاری پروگرام ہو یا خانگی پروگرام دعوت و تقریب ریاستی وزراء اور عہدیداروں کی آمد پر ان سے 12فیصد مسلم تحفظات کی بات کی جارہی ہے۔ حکومت کو وعدے کی یاددہانی کرائی جانے پر مرکوز ہے۔ کئی ملی تنظیموں سے خوشگوار تعلقات رکھنے والے ایک شہری نے بتایا کہ چونکہ عیدالاضحی کے سلسلہ میں کئی افراد کاروبار اور عید کی تیاریوں میں جٹے ہوئے ہیں اور کئی ملی و سماجی تنظیمیں بھی عید کے سلسلہ میں مصروف ہیں

اور انہوں نے عید کے بعد نمائندگیوں اور 12فیصد مسلم تحفظات تحریک میں شدت پید اکرنے کا ارادہ کیا ہے۔ سرکاری ملازمتوں پر تقررات کے اعلامیہ سے قبل 12فیصد مسلم تحفظات کو یقینی بنانے کی کوششیں جاری ہیں اور تحریک کے بانی نیوز ایڈیٹر ’ سیاست‘ جناب عامرعلی خاں ریاست بھر میں تحریک کو مضبوط کرنے کے لئے ملی، مدہبی، سیاسی، طلبہ ، اساتذہ نیز ہر شعبہ حیات کے افراد سے رابطہ قائم کئے ہوئے ہیں۔ اس سلسلہ میں انہوں نے ضلع نظام آباد کا بھی دورہ کیا تھا۔ بتایا جاتا ہے کہ 12فیصد مسلم تحفظات کی تحریک اب ہر سیاسی گوشہ میں موضوع بحث بنی ہوئی ہے اور شہریوں میں اس کا زبردست ردعمل دیکھا جارہا ہے۔ اولیائے طلبہ اور اکثر ایسے والدین جن کے بچے گریجویشن سے فارغ ہوچکے ہیں اس تحریک کو آس بھری نظر سے دیکھ رہے ہیں اور اس تحریک میں اپنے بچوں کے روشن مستقبل کی راہ تلاش کرتے ہیں اور نوجوان نسل جو اپنی ترجیحات کو ملک و سماج کیلئے صرف کرنے کیلئے مقامی سطح پر سرکاری روزگار کے لئے بے چین ہیں اور ایسے نوجوان جو روزگار کے متلاشیاں ہیں حکومت پر دباؤ بنانے کیلئے منظم کی گئی سیاست کی تحریک سے جڑنے کی کوشش کررہے ہیں۔ 12فیصد مسلم تحفظات کے لئے آج مریال گوڑہ ضلع نلگنڈہ میں علماء کونسل کی جانب سے آر ڈی او کو یادداشت پیش کی گئی۔ تلنگانہ علماء کونسل جنرل سکریٹری مفتی محمد عمر کی قیادت میں وفد نے آر ڈی او کو ایک یادداشت پیش کی اور 12فیصد مسلم تحفظات کو یقینی بنانے کیلئے حکومت پر زور دیا۔

انہوں نے سیاست کے اقدام کی ستائش کی اور حصول تحفظات تک تحریک سے جڑے رہنے کا ارادہ کیا۔ اس موقع پر محمد عبدالرحمن خاں، محمد امجد، محمد اسمعیل شریف، عمران خاں، محمد عرفان و دیگر موجود تھے۔ شاد نگر کے علاقہ میں مدرسہ عربیہ و مدینہ مسجد کی کمیٹیوں کی جانب سے تحصیلدار فرخنگر منڈل کو یادداشت پیش کی گئی۔ صدر سید مصلح الدین کی قیادت میں وفد نے کہا کہ 12فیصد تحفظات کا حکومت نے جو وعدہ کیا ہے اس پر فوری عمل آوری کرنی چاہیئے اور بی سی کمیشن کی سفارش کو بنیاد بناکر مسلمانوں کو فوری تحفظات فراہم کئے جائیں۔ جب تک مسلم تحفظات پر عمل یقینی نہیں ہوجاتا حکومت کو چاہیئے کہ وہ سرکاری ملازمتوں پر تقررات کا اعلامیہ جاری نہ کرے۔ اس موقع پر خواجہ بشیر علی، ایم اے عزیز، سید مسعود، محمد فیروز، عبدالعزیز، محمد جہانگیر و دیگر موجود تھے۔ آرمور ضلع نظام آباد میں تلنگانہ اردو جرنلسٹ فورم کی جانب سے آرمور تحصیلدار کو ایک یادداشت پیش کی گئی اور حکومت تلنگانہ سے فوری 12فیصد مسلم تحفظات پر عمل آوری کا مطالبہ کیا گیا۔ اس موقع پر سید ظفر علی، حسین جابری، محمد شاذ، محمد سیف علی، محمد عتیق کے علاوہ دیگر موجود تھے۔ محبوب نگر میں الحمد للہ ایجوکیشنل اینڈ ویلفیر سوسائٹی کی جانب سے 12فیصد مسلم تحفظات پر شعور بیداری کرتے ہوئے سیاست کی تحریک کو مضبوط کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ سوسائٹی کی جانب سے سیاست کے فلاحی اقدامات کاتذکرہ کیا گیا اور ملی مسائل ، نوجوان نسل کی تعمیر و تربیت پر روز نامہ سیاست کے اقدامات کی ستائش کی گئی۔تحریک کے آغاز پر جواں سال نیوز ایڈیٹر ’سیاست‘ جناب عامر علی خاں کی فکر و نظر کی ستائش کی گئی۔ اس موقع پر صدر الحمد للہ ایجوکیشنل اینڈ ویلفیر سوسائٹی محبوب نگر محمد بشیر الدین و دیگر موجود تھے۔ نرمل ضلع عادل آباد میں طلبہ تنظیم حرا ماڈل اسکول کے صدر محمد توفیق کے ہمراہ آر لای او آفس پہنچ کر12فیصد مسلم تحفظات کی یادداشت پیش کی۔ بعد ازاں اس طلبہ تنظیم ، محمدیہ ایجوکیشنل اینڈ ویلفیر سوسائٹی نرمل اور حرا ماڈل اسکول کے اسٹاف نے بھی تحفظات کا مطالبہ کرتے ہوئے یادداشت پیش کی۔ اس موقع پر جناب ادریس، راشد، خواجہ بیگ، سراج الدین و دیگر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT