Wednesday , February 21 2018
Home / ہندوستان / مسلم عورتوں کا غیرمردوں سے چوڑیاں پہننا گناہ:دارالعلوم دیوبند

مسلم عورتوں کا غیرمردوں سے چوڑیاں پہننا گناہ:دارالعلوم دیوبند

دیوبند، 11 فروری (سیاست ڈاٹ کام) معروف دینی درسگاہ دارالعلوم دیوبند نے فتوی جاری کرکے کہا ہے کہ مسلم عورتوں کے گھر کے باہر غیرمردو ں کے ہاتھوں سے چوڑیاں پہننا شریعت کے خلاف ہے ۔دارالعلوم کے فتویٰ سیکشن کے صدر مفتی حبیب الرحمن خیرآبادی نے آج یہاں بتایا کہ ایک شخص نے ادارہ کے دارالافتا سے تحریری سوال کیا تھا کہ عورتوں کو چوڑیاں پہننے کے لئے اپنے ہاتھ غیر مردوں کے ہاتھ میں دینے پڑتے ہیں، کیا یہ مناسب ہے ۔جواب میں دارالعلوم دارالافتانے کہا کہ غیر مردوں کے ہاتھوں سے چوڑیاں پہننا سخت گناہ ہے ۔ اس سے ہر مسلمان عورت کو بچنا چاہیے ۔ دارالعلوم اس سے پہلے عورتوں کے بال کٹوانے ، بھوئیں بنوانے ، منی اسکرٹ اور جینس پہننے ، غیر مردوں کے ساتھ روزگار کرنے سے متعلق خواتین پر بندشیں لگانے کا فتویٰ بھی جاری کر چکا ہے ۔ خیال رہے دارالعلوم خواتین کی آزادی پر طرح طرح کی روک لگانے کی وجہ سے ترقی پسند خواتین کی ناراضگی جھیل چکا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT