Sunday , May 27 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلم ممالک کے باہمی اتحاد کے دعوے حقیقت سے بعید

مسلم ممالک کے باہمی اتحاد کے دعوے حقیقت سے بعید

حقیقی عملی اتحاد سے دشمنوں سے مقابلہ ممکن، مفتی خلیل احمد کا خطاب
حیدرآباد۔ 16 فبروری (سیاست نیوز) مولانا مفتی خلیل احمد شیخ الجامعہ جامع نظامیہ نے مسلم ممالک کے باہمی اتحاد کے دعوئوں کو مضحکہ خیز قرار دیا اور کہا کہ ہر کوئی باہمی اتحاد اور مظلوموں کی مدد کا دعوی کرتا ہے لیکن حقیقت میں کسی بھی ملک نے مظلوم مسلمانوں کا ساتھ نہیں دیا۔ ہمیں بیان بازی، کانفرنس اور دکھاوے کے بجائے حقیقت کی طرف لوٹنا ہوگا۔ عملی طور پر اتحاد کے مظاہرے کے ذریعہ ہم دشمنوں کی سازشوں اور حملوں کا مقابلہ کرسکتے ہیں۔ مفتی خلیل احمد کل رات ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی کی استقبالیہ تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک مسلم ممالک بیان بازی کے بجائے اتحاد کا عملی نمونہ پیش نہیں کرتے اس وقت تک ان کے یہ دعوے کھلے ثابت ہوں گے۔ مفتی خلیل احمد نے کہا کہ اسلام محبت، امن اور سلامتی کے ساتھ انسانیت کا درس دیتا ہے۔ علاقہ، زبان، تہذیب ثانوی درجہ رکھتے ہیں۔ انسانیت اور اس کی خدمت کو علاقہ، زبان اور تہذیب پر فوقیت حاصل ہے۔ لیکن افسوس کہ آج تمام مسلمان انسانیت کو فراموش کرتے ہوئے علاقہ، زبان اور تہذیب میں کھوچکے ہیں اور گمراہی کا شکار ہیں۔ اسلام اور مسلمانوں پر دشمنوں کے حملوں کا دفاع کرنے سے قاصر ہیں کیوں کہ ہم آپس میں انتشار کا شکار ہیں۔ مفتی خلیل احمد نے کہا کہ ہم آپس میں بھلے ہی کسی مسلک کے ماننے والے کیوں نہ ہوں لیکن دشمن کی نظر میں تمام مسلمان ہیں۔ وہ ہمیں مسلمان کی حیثیت سے دیکھتا ہے۔ جب دشمن کی یہ فکر ہے تو پھر مسلمانوں کی فکر کیا ہونی چاہئے۔ ہمیں شیعہ، سنی، وہابی اور دیگر اختلافات سے بالاتر ہوکر جسد واحد کی طرح مظاہرہ کرنا ہوگا۔ مسلمانوں میں اختلافات کے سبب شام، عراق اور افغانستان تباہ ہوچکے ہیں اور بھی کئی ممالک میں تباہی کا سلسلہ جاری ہے۔ مفتی خلیل احمد نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ 50 سے زائد مسلم ممالک ہونے کے باوجود مسلمان پناہ گزینوں کو یورپ میں پناہ ملی اور کسی مسلم ملک نے انہیں جگہ نہیں دی۔ پھر ہم اسلام اور انسانیت کے دعویدار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آپسی اختلافات سے دنیا بھر میں مسلمانوں کو نقصان ہوا ہے اور وہ یہ بات بلامبالغہ کہنے کے موقف میں ہیں کہ کسی بھی مسلم ملک نے مظلوم مسلمانوں کا ساتھ نہیں دیا۔

TOPPOPULARRECENT