Saturday , December 16 2017
Home / ہندوستان / مسلم نوجوان سے دوستی پر لڑکی کو خاتون بی جے پی لیڈر کا طمانچہ

مسلم نوجوان سے دوستی پر لڑکی کو خاتون بی جے پی لیڈر کا طمانچہ

علیگڑھ (یوپی)22ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک مقامی خاتون بی جے پی لیڈر نے بتایا جاتا ہے کہ اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان سے دوستی بڑھانے پر یہاں ایک لڑکی کو طمانچہ رسید کردیا، جس کا ویڈیو سوشیل میڈیا پر عام ہوچکا ہے۔ پولیس عہدیداروں کے بموجب متعلقہ نوجوان کو عوامی مقام پر نازیبا حرکت کے الزام پر گرفتار کرکے بعد میں ضمانت پر رہا کردیا گیا۔ یہ واقعہ منگل کو پیش آیا جب بی جے پی کی علیگڑھ سٹی کنوینر سنگیتا ورشنی نے متعلقہ لڑکی کو دو بار طمانچہ مارا جب اُسے مسلم نوجوان کے ساتھ چائے نوشی کرتے دیکھا۔ سوشیل میڈیا پر موجود ویڈیو میں سنگیتا کو یہ کہتے سنا جاسکتا ہے کہ ’’تیرے کو سمجھ میں نہیں آتا کون ہندو ہے کون مسلمان ہے، پیار سے سمجھا رہی ہوں، سمجھ میں ہی نہیں آرہا‘‘۔ ایس ایس پی راجیش پانڈے نے گزشتہ روز کہاکہ اِس واقعہ کے بعد آئی پی سی کی متعلقہ دفعات کے تحت ایک کیس نوجوان کے خلاف درج کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT