Thursday , November 23 2017
Home / Top Stories / مسلم پرسنل لاء کے تعلق سے غلط تاثر ہٹایا جائے

مسلم پرسنل لاء کے تعلق سے غلط تاثر ہٹایا جائے

چند عناصر پھوٹ ڈالنے کی کوشش کررہے ہیں:مولانا خالد سیف اللہ رحمانی
اورنگ آباد ۔ /25 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے سکریٹری مولانا خالد سیف اللہ رحمانی نے کہا کہ مسلم پرسنل لا کے تعلق سے غلط تاثر کو ہٹادیا جائے ملک میں مسلمانوں کے ساتھ ساتھ غیر مسلم میں بھی پرسنل لا کے بارے میں جو غلط تاثر پیدا کیا جارہا ہے اس کو ذہن سے نکالدینے کی ضرورت ہے ۔ چند عناصر غلط تاثر پھیلاکر طبقات میں پھوٹ ڈالنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا خالد سیف اللہ رحمانی نے کہا کہ مسلمانوں کے لئے موجودہ قانون اطمینان بخش ہے اس میں تبدیلی نہیں لائی جائے ۔ خالد سیف اللہ رحمانی اور ان کے یو پی ہم منصب ظفر یاب جیلانی بھی اورنگ آباد میں موجود ہیں جہاں وہ مسلم پرسنل لاء پر دو روزہ اجلاس سے خطاب کریں گے ۔ ظفر یاب جیلانی نے کہا کہ شریعت میں ہرچیز شامل ہے ۔ نکاح سے لیکر طلاق ، وقف اور دیگر اہم موضوعات کا احاطہ کیا گیا ہے ۔ بعض لوگ افواہیں پھیلارہے ہیں ۔ پرسنل لا سے متعلق غلط بیانی سے کام لے کر قوم کو پھوٹ کا شکار بنارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بھی خیال غلط ہے کہ ایک مسلمان مرد چار بیویاں رکھ سکتا ہے ۔ کسی وجہ کے بغیر اسے چار شادیاں کرنے کی اجازت ہے ۔ ازدواجی زندگی میں ایک دوسرے کے ساتھ پیار محبت اخلاص جب تک رہے گا یہ شادی اٹوٹ ہوگی ۔ جب نفرت پیدا ہوتی ہے اور متواتر کوششوں کے باوجود دونوں میاں بیوی میں مصالحت کا کوئی امکان باقی نہ رہ جائے تو اس کے لئے واحد راستہ طلاق ہی ہوتا ہے ۔ انہوں نے مسلم طبقہ کے مختلف گوشوں سے اپیل کی کہ وہ اپنے اندر مسلم پرسنل لاء کے غلط تاثر کو دور کرکے متحد ہوجائیں ۔واضح رہے کہ ملک بھر میں گزشتہ چند مہینوں سے طلاق ثلاثہ کے خلاف مہم چلائی جارہی ہے ۔ اس سلسلے میں مختلف تنظیموں اور خواتین کے گروپس نے عدالت سے رجوع ہوکر طلاق ثلاثہ کو ختم کرنے پر زور دیا ہے ۔ ملک میں یکساں سیول کوڈ کے نفاذ کیلئے مودی حکومت بھی کوشش کررہی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT