Sunday , April 22 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلم پرسنل لا بورڈ اجلاس میں طلاق ثلاثہ اور بابری مسجد اہم موضوعات

مسلم پرسنل لا بورڈ اجلاس میں طلاق ثلاثہ اور بابری مسجد اہم موضوعات

اصلاح معاشرہ مہم اور سوشل میڈیا کے استعمال پر بھی غور ہوگا، سہ روزہ اجلاس ایجنڈے کے اہم نکات
حیدرآباد۔ 5 فبروری (سیاست نیوز) آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے 9 فبروری سے شروع ہونے والے 26 ویں اجلاس عام میں طلاق ثلاثہ بل پر پارلیمنٹ کی کارروائی، بابری مسجد مقدمہ کے لائحہ عمل پر غور، پرسنل لا بورڈ کے مالی استحکام، عدالتی مقدمات کے اخراجات، اصلاح معاشرہ مہم، سوشل میڈیا کے استعمال اور بورڈ کی مختلف ذیلی کمیٹیوں کی کارکردگی جیسے امور کو ایجنڈے میں شامل کیا گیا ہے۔ سہ روزہ اجلاس میں جملہ 4 علیحدہ نشستوں کا اہتمام کیا جائے گا اور 9 فبروری بعد نماز مغرب مجلس عاملہ کا اجلاس ہوگا جس میں صرف ارکان عاملہ کو شرکت کی اجازت رہے گی۔ دیگر اجلاسوں میں تمام ارکان اور مدعوین شرکت کرسکیں گے۔ تاسیسی ارکان، میقاتی ارکان اور عام ارکان ملک بھر سے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ مسلم پرسنل لا بورڈ کی جانب سے جاری کردہ ایجنڈے کے مطابق جمعہ کو مجلس عاملہ کے اجلاس میں طلاق ثلاثہ بل پر پارلیمنٹ کی کارروائی، عدالتی کارروائی پر صرف ہونے والی رقومات، فراہمی مالیہ، اصلاح معاشرہ مہم کی پیشرفت اور آئندہ لائحہ عمل اور سوشل میڈیا کے ذریعہ بورڈ کی کارکردگی سے عوام کو باخبر کرنے جیسے امور کو ایجنڈے میں شامل کیا گیا ہے۔ مولانا رابع حسنی ندوی صدر آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ اجلاس کی صدارت کریں گے۔ عاملہ کے ارکان 10 ستمبر 2017ء کے بعد سے ووٹ کی کارکردگی کا جائزہ لیتے ہوئے سابق کارروائی کی توثیق کریں گے ۔ اس اجلاس میں تعزیتی قراردادیں بھی منظور کی جائیں گی۔ 10 فبروری صبح 10 بجے پہلی نشست ہوگی جس میں ارکان عاملہ کے علاوہ دیگر ارکان اور مدعوین شرکت کریں گے۔ کلکتہ میں منعقدہ اجلاس کی کارروائی کی توثیق کی جائے گی اور جنرل سکریٹری اپنی رپورٹ پیش کریں گے۔ خطبہ صدارت اور جنرل سکریٹری کی رپورٹ پر دیگر ارکان اظہار خیال کریں گے۔ دوسری نشست بعد مغرب ہوگی جس میں بورڈ کی مالی صورتحال، خازن کی رپورٹ اور گوشوارہ حساب و سالانہ بجٹ کو منظوری دی جائے گی۔ بورڈ کے مالی استحکام پر غور کرتے ہوئے قانونی معاملات کے اخراجات کا جائزہ اور رقومات کے حصول کے لیے ممکنہ تدابیر پر غور کیا جائے گا۔ اراکین اور مدعوین کو بورڈ کے کاموں میں متحرک اور سرگرم حصہ لینے کی حکمت عملی طے کی جائے گی۔ اس نشست میں بورڈ کی مختلف کمیٹیاں جیسے اصلاح معاشرہ، دارالقضاۃ کمیٹی، تفہیم شریعت کمیٹی، بابری مسجد کمیٹی، قانونی کمیٹی، مجموعہ قوانین اسلامی کمیٹی اور شعبہ خواتین کی رپورٹ پیش کی جائے گی۔ 11 فبروری صبح 10 بجے تیسری نشست کا آغاز ہوگا جس میں تمام ارکان اور مدعوین شرکت کریں گے۔ اس اجلاس میں بابری مسجد مقدمہ کا جائزہ اور سپریم کورٹ میں اب تک کی عدالتی سرگرمیوں کا خلاصہ اور آئندہ کے لائحہ عمل پر غور کیا جائے گا۔ مسلم پرسنل لا سے متعلق مختلف ہائی کورٹس اور سپریم کورٹ میں زیر سماعت مقدمات کی رپورٹ پر غور و خوض کرتے ہوئے ارکان کی رائے حاصل کی جائے گی۔ طلاق ثلاثہ بل پر پارلیمانی کارروائی کا جائزہ اور آئندہ لائحہ عمل کو قطعیت دی جائے گی۔ اجلاس کے اختتام پر اعلامیہ حیدرآباد (حیدرآباد ڈکلریشن) جاری کیا جائے گا اور صدر بورڈ مولانا رابع حسنی ندوی کا اختتامی خطاب ہوگا۔ 11 فبروری کی شب جلسہ عام میں ملک بھر کے نامور علماء اور مختلف مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین شرکت کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT