Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم پرسنل لا بورڈ سے اسداویسی کی رکنیت ختم کردی جائے

مسلم پرسنل لا بورڈ سے اسداویسی کی رکنیت ختم کردی جائے

شریعت میں مداخلت پر حیدرآباد ایم پی جداگانہ موقف، عبداللہ سہیل
حیدرآباد ۔ 15 اکٹوبر (سیاست نیوز) صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ شیخ عبداللہ سہیل نے یکساں سیول کوڈ کے مسئلہ پر مسلمانوں میں تفرقہ پیدا کرنے والے صدر مجلس اسدالدین اویسی کو مسلم پرسنل لا بورڈ کی رکنیت سے محروم کردینے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ مسلم پرسنل لا بورڈ ملک کے تمام مسلمانوں کی نمائندہ تنظیم ہے۔ مسلم پرسنل لا بورڈ کے تمام ذمہ داروں نے مرکزی حکومت کی شریعت میں بیجا مداخلت کا سنجیدگی سے جائزہ لینے کے بعد لا کمیشن کے سوالنامے کا بائیکاٹ کرنے کا متفقہ طور پر فیصلہ کیا ہے۔ مسلم پرسنل لا کے فیصلے کا احترام کرنے کے بجائے اسدالدین اویسی نے جداگانہ موقف اختیار کیا ہے اور اپنی جماعت کی جانب سے لا کمیشن کے سوالناموں کا جواب دینے کا اعلان کرتے ہوئے ایک منظم سازش کے تحت مسلمانوں کے اتحاد میں پھوٹ ڈالنے کی کوشش کی ہے۔ یکساں سیول  کوڈ کے مسئلہ پر مسلم پرسنل لا بورڈ نے جو فیصلہ کیا ہے وہ حق بجانب ہے اور قابل ستائش بھی ہے جس کا ملک کے مسلمان احترام کرتے ہیں۔ سوالنامے کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے مسلم پرسنل لا بورڈ نے یکساں سیول کوڈ کے مسلمان خلاف ہونے کا ملک  کے عوام کو سخت پیغام پنچایا ہے۔ شیخ عبداللہ سہیل نے بحیثیت رکن مسلم پرسنل لا بورڈ اسدالدین اویسی کی جانب س یبورڈ کے فیصلے سے اختلاف کرنے پر انہیں فوری مسلم پرسنل لا بورڈ سے علحدہ کردینے کا مطالبہ کیا۔ کانگریس کے قائد نے کہا کہ شریعت کے معاملے میں رائے کے اظہار کرنے کا اسدالدین اویسی کو کوئی اختیار نہیں ہے کیونکہ وہ مفتی ہیں نہ عالم ہیں۔ صرف بیرسٹر ہے۔ مسلم غلبہ والے حلقہ لوک سبھا سے کامیاب ہونا اور اچھی انگریزی میں بات کرلینے سے وہ شریعت کے معاملے میں ردعمل کا اظہار کرنے کا کوئی اختیار نہیں رکھتے۔ اس مسئلہ پر سیاستدانوں کو نہیں بلکہ علماء اور مفتیان کو ہی ردعمل دینا چاہئے۔ شیخ عبداللہ سہیل نے کہا کہ ماضی میں اسدالدین اویسی کے والد سلطان صلاح الدین اویسی نے بابری مسجد ایکشن کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے مسلمانوں میں تفرقہ پیدا کیا تھا۔ اسد الدین اویسی اپنے مرحوم والد کی تقلید کرتے ہوئے پھر ایک بار شریعت کے مسئلہ پر مسلمانوں میں اختلاف رائے پیدا کرتے ہوئے بالواسطہ بی جے پی اور سنگھ پریوار کی مدد کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT