Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / مسلم پرسنل لا بورڈ کے حق میں دستخطی مہم میں شدت ضروری

مسلم پرسنل لا بورڈ کے حق میں دستخطی مہم میں شدت ضروری

احتجاجی جلسوں سے فرقہ پرستوں کا فائدہ : عزیز پاشاہ
حیدرآباد۔27اکٹوبر(سیاست نیوز) یونیفارم سیول کوڈ کے متعلق مسلم پرسنل لاء بورڈ کی حمایت کرتے ہوئے سابق پارلیمنٹ وسینئر کمیونسٹ قائد جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ احتجاجی جلسوں‘ جلوسوں ‘ اور دھرنے سے فرقہ پرست طاقتوں کے عزائم کامیاب ہوسکتے ہیںلہذا ہمیںچاہئے کے یونیفارم سیول کوڈ کے خلاف جو طریقہ کار اور احتجاجی لائحہ عمل مسلم پرسنل لاء بورڈ نے اعلان کیا ہے اس کے مطابق کام کرتے ہوئے اس کے خلاف بڑے پیمانے پر دستخطی مہم چلائیں۔آج یہاں بی سی بھون حمایت نگر میں کل ہند مسلم میناریٹی آرگنائزیشن کے زیر اہتمام تلنگانہ میںمسلمانوں کی فلاح وبہبود اور بارہ فیصد مسلم تحفظات کے عنوان پر منعقدہ گول میز کانفرنس سے خطاب کے دوران جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ یونیفارم سیول کوڈ اور طلاق ثلاثہ دو علیحدہ مسلئے ہیں جن کو یکجہ کرنے کی مرکزی حکومت کوشش کررہی ہے تاکہ مجوزہ اترپردیش انتخابات میں اقلیتوں کے ووٹ کا آسانی کے ساتھ استحصال کیاجاسکے۔ انہوں نے کہاکہ جمہوری طریقہ کار اپناتے ہوئے یونیفارم سیول کوڈ کی مخالفت میں احتجاجی پروگراموں کو قطعیت دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہاکہ جہاں تک طلاق کا معاملے ہیں تو پورا ہندوستان میںجہاں پر مسلم سماج میںطلاق کا تناسب 23فیصد ہے تو وہیں غیرمسلم سماج بالخصوص ہندئو سماج میںیہ تناسب65فیصد تک پہنچ گیا ہے اور ریاست گجرات میں اس میںسرفہرست ہے۔جناب سیدعزیز پاشاہ طلاق کے مسلئے کو یونیفارم سیول کوڈ سے جوڑنا دستور ہند کی خلاف ورزی ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ اس کا اثرہندئو سماج کے ساٹھ ہزار سے زائد طبقات پر بھی پڑیگا۔انہوں نے کہاکہ دستور کے مطابق یونیفارم سیول کوڈ کے نفاذ کے لئے آزادنہ طور پر عوامی رائے طلب کرنا ضروری ہے۔جناب سید عزیز پاشاہ نے ریاست تلنگانہ میںاقلیتوں کے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کی روک تھام کے لئے ایک مضبوط احتجاجی حکمت عملی کو ضروری قراردیا۔انہوں نے کہاکہ انتخابی منشور کے تحت ریاست تلنگانہ میںبرسراقتدار سیاسی جماعت تلنگانہ راشٹرایہ سمیتی تلنگانہ میںمسلمانوں کو بارہ فیصد تحفظات فراہم کرنے میں اب تک ناکام ہے۔ انہو ںنے کہاکہ ا س ضمن میںحکومت تلنگانہ کی جانب سے تشکیل دی گئی سدھیر کمیٹی کی رپورٹ غیر کارکردرہے گی۔ جناب سیدعزیز پاشاہ نے کہاکہ ریاست تلنگانہ میںمسلم اقلیت کی پسماندگی پر مشتمل اعداد وشمار کے ساتھ ایک حقیقی رپورٹ جب تک بی سی کمیشن تیار نہیںکرتا تب تک تلنگانہ میںمسلمانوںکوبارہ فیصد تحفظات کی فراہمی ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے حکومت تلنگانہ کو ماضی کے تجربوں سے سبق حاصل کرنے کا مشورہ دیا۔

TOPPOPULARRECENT