Wednesday , January 17 2018
Home / شہر کی خبریں / مسلم گھرانوں میں شادی کو آسان بنانے پر زور

مسلم گھرانوں میں شادی کو آسان بنانے پر زور

دفتر سیاست میں نعتیہ مشاعرہ ، جناب زاہد علی خان و دیگر کا خطاب

دفتر سیاست میں نعتیہ مشاعرہ ، جناب زاہد علی خان و دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ /18 جنوری (دکن نیوز) ادارہ سیاست و قلی قطب شاہ یکتا آرٹس اکیڈیمی کی جانب سے 15 واں سالانہ نعتیہ مشاعرہ ’’ نکہت مدینہ‘‘ کا اہتمام محبوب حسین جگر ہال ، احاطہ روزنامہ سیاست (عابڈز) پر عمل میں آیا ۔ جس کی صدارت جناب زاہد علی خان ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کی ۔ اس مشاعرہ میں مہمانان خصوصی کی حیثیت سے نواب محمد کاظم علی خان صدر امبیڈکر نیشنل کانگریس، محمد قمر الدین انجنیئر ان چیف ، شریک تھے ۔ قاری طیب پاشاہ قادری کی قرأت کلام پاک و نعت شریف سے نعتیہ مشاعرہ کاآغاز ہوا ۔ حمد باری تعالیٰ سلطان مرزا نے پیش کی ۔ جناب زاہد علی خان ایڈیٹر روزنامہ سیاست نے کہا کہ ربیع الاول کے مبارک ماہ سے مسلمان گزررہے ہیں اور اقطاع عالم میں مسلمانوں نے /12 ربیع الاول کو حضوراکرمؐ سے اپنی بھرپور وابستگی کا ثبوت دے کر والہانہ عشق و محبت کی تھی جس کے سلسلہ کو آخری سانس تک جاری و ساری رکھنے کی ضرورت ہے ۔ اس لئے آپؐ سے محبت ہی ایمان کا جز ہے ۔ انہوں نے اس پر افسوس کا اظہار کیا کہ مسلمانوں کی بڑی تعداد /12 ربیع الاول کو سڑکوں پر کعبۃ اللہ اور مسجد نبویؐ کے بڑے بڑے ماڈل بناکر رکھی ہے اور بعض مقامات و جلوسوں میں ڈی جے بجائے گئے اس عمل سے مسلمانوں کو باز آنا چاہئیے ، آپؐ کی یوم ولادت کے وقت مسلمانوں میں ناچ و گانوں کا یہ عمل سرائیت کرگیا ہے جس کو روکنے کی شدید ضرورت ہے ۔ یہ فضول خرچی کے سوا کچھ نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف مسلمانوں نے /12 ربیع الاول کو بڑے پیمانے پر کھانا کھلایا یہ عمل رب کی رضا و خوشنودی کا ذریعہ ہے ۔ انہوں نے مسلم گھرانوں میں لڑکیوں کی شادیوں کی تاخیر پر اظہار تاسف کرتے ہوئے کہا کہ اس کی اصل وجہ جہیز کی بے جا مانگ اور شادی کے روز کھانے کے نام پر نت نئے ڈشس کے رواج کو عام کرنا ہے جس کے لئے ضروری ہے کہ شادی کو آسان کیا جائے جب مسلمان شادی بیاہ تقاریب کو آسان کرلیں گے تو اس وقت متمول قوم کہلائے گی ۔ نواب کاظم علی خان نے نبی کریمؐ کی شان میں اشعار سنائیے۔ احمد صدیقی مکیش کنوینر مشاعرہ ، زاہد حسین زاہد آرگنائزر نے شعراء و شرکاء کا خیرمقدم کیا ۔ زاہد حسین زاہد ، ڈاکٹر ایس ایم محمود موسوی ، ابراہیم علی منیر ، یوسف الدین یوسف ، فاروق عارفی ، کامل حیدرآباد ، یوسف روش ، خان اطہر ، سلطان مرزا نے کلام سنایا ۔

TOPPOPULARRECENT