Saturday , June 23 2018
Home / دنیا / مشتبہ دہشت گردوں کی تفتیش، ایذا رسانی پر امتناع برقرار

مشتبہ دہشت گردوں کی تفتیش، ایذا رسانی پر امتناع برقرار

واشنگٹن ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی جاسوس ادارہ سی آئی اے کی طرف سے اختیار کردہ گرفتاریوں اور پوچھ گچھ و تفتیش کے پروگرام پر عوامی بحث مباحث میں اضافہ کے درمیان قصرصدارت وہائیٹ ہاوز نے کہا ہیکہ پوچھ گچھ کے دوران ایذا رسانی پر صدر بارک اوباما صدر بارک اوباما کی طرف سے عائد کردہ امتناع کو مستقبل کی امریکی قیادت کی طرف سے منسوخ کرن

واشنگٹن ۔ 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) امریکی جاسوس ادارہ سی آئی اے کی طرف سے اختیار کردہ گرفتاریوں اور پوچھ گچھ و تفتیش کے پروگرام پر عوامی بحث مباحث میں اضافہ کے درمیان قصرصدارت وہائیٹ ہاوز نے کہا ہیکہ پوچھ گچھ کے دوران ایذا رسانی پر صدر بارک اوباما صدر بارک اوباما کی طرف سے عائد کردہ امتناع کو مستقبل کی امریکی قیادت کی طرف سے منسوخ کرنا دشوار ہوگا۔ وائیٹ ہاؤز کے پریس سکریٹری یوش ارنسٹ نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ ’’میں سمجھتا ہوں کہ اس قسم کے انتہائی شفاف، حوصلہ افزاء اور خوش آئند مباحث سے مستقبل کے کسی بھی امریکی کانڈر انچیف (صدر) کو صدر اوباماکے ان احکام کی تنسیخ میں شدید دشواری ہوگی‘‘۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے یہ بھی اعتراف کیا کہ اس بات کی کوئی ضمانت نہیں دی جاسکتی کہ مستقبل کے کمانڈر انچیف کیا فیصلہ کریں گے۔ واضح رہے کہ دہشت گردی کے واقعات کے ضمن میں گرفتار شدہ افراد سے پوچھ گچھ و تفتیش کے دوران ایذا رسانی پر سی آئی اے رپورٹ کی اجرائی کے بعد امریکہ کو اندرون و بیرون ملک سخت تنقیدوں کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ چنانچہ امریکہ اس دوران کئی ممالک سے ربط پیدا کرتے ہوئے موقف کے وضاحت کی کوشش کررہا ہے۔ پریس کانفرنس سے شاذ و نادر ہی خطاب کرنے والے سی آئی اے کے ڈائرکٹر جان برینن نے کہا کہ ’’میں اپنے کئی بیرونی ہم منصبوں سے بات چیت کرچکا ہوں تاکہ اس دستاویز کی اجرائی کا موقع فراہم کیا جاسکے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT