Wednesday , April 25 2018
Home / پاکستان / مشرف کا دوبئی سے واپسی پر حفاظتی انتظامات کا مطالبہ

مشرف کا دوبئی سے واپسی پر حفاظتی انتظامات کا مطالبہ

اسلام آباد ۔ /20 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) جنرل پرویز مشرف سابق صدر پاکستان نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات سے وطن واپسی اسی صورت میں ممکن ہے جبکہ اعلیٰ سطحی غداری مقدمہ میں پاکستان کی خصوصی عدالت کے اجلاس پر حاضر ہوسکیں جبکہ انہیں حفاظتی انتظامات کا تیقن دیا جائے ۔ 74 سالہ سبکدوش جنرل گزشتہ سال سے دوبئی میں مقیم ہیں ۔ جبکہ انہیں علاج کیلئے پاکستان سے باہر جانے کی اجازت دی گئی تھی ۔ سابقہ صدر پر مارچ 2014 ء میں غداری کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا تھا اور الزام عائد کیا گیا تھا کہ انہوں نے ملک میں ایمرجنسی نافذ کردی اور کئی عدالت کے ججوں کو ان کے گھروں پر نظر بند کردیا اور 100 ججوں کو برطرف کردیا تھا ۔ مشرف کے وکیل نے وزارت داخلہ میں ایک درخواست پیش کی ہے کہ سابق صدر کی جان کو خطرہ لاحق ہے ۔ انہیں دھمکیاں دی جارہی ہیں ۔ وزارت داخلہ کی ان کی درخواست قبول کرتے ہوئے کہا کہ مشرف کو کافی حفاظتی انتظامات فراہم کئے جائیں گے ۔ جیو نیوز کی خبر کے بموجب وزارت داخلہ نے اپنے جواب میں مشرف کے سفر کی تفصیلات دریافت کی ہیں اور معلوم کیا ہے کہ ان کا قیام کہاں ہوگا تاکہ بے عیب حفاظتی انتظامات کئے جائیں ۔

TOPPOPULARRECENT