Saturday , December 16 2017
Home / پاکستان / مشرف کے سفر پر امتناع برخاست

مشرف کے سفر پر امتناع برخاست

اسلام آباد ۔ 16 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) پاکستانی سپریم کورٹ نے پرویز مشرف کو راحت پہنچاتے ہوئے حکومت کو سابق فوجی حکمراں کے بیرونی سفر پر عائد پابندی کو برخاست کرنے کا حکم دیا ہے۔ پرویز مشرف بڑے پیمانے پر ملک سے غداری کے بشمول دیگر کئی مقدمات میں ماخوذ ہیں۔ عدالت عظمیٰ نے اپنی رولنگ میں کہا کہ 72 سالہ مشرف پر کوئی قانونی امتناع نہیں ہے۔ سوائے اس کے کہ حکومت ان کے سفر کو روکنا چاہتی ہے۔ سپریم کورٹ نے سندھ ہائی کورٹ کے ایک فیصلے کے خلاف حکومت کی درخواست کو مسترد کردیا۔ ہائی کورٹ نے بھی رولنگ دی تھی کہ سابق صدر مشرف ملک سے باہر جاسکتے ہیں۔ مشرف کے وکیل فروغ نسیم نے میڈیا سے کہا کہ حکومت مشرف کو بیرونی ملک جانے سے غیرقانونی طور پر روک رہی ہے۔ نسیم نے کہا کہ ’’سپریم کورٹ کے فیصلے کے مطابق مشرف کے بیرونی دورہ پر کوئی امتناع نہیں ہے‘‘۔ تاہم انہوں نے کہاکہ حکومت کو یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ کسی بھی شخص کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرتے ہوئے بیرونی ملک کے سفر سے روک سکتی ہے۔ مشرف کے بیرونی سفر کا مسئلہ 2013ء میں اٹھایا تھا جب حکومت نے ان کے خلاف ملک سے غداری کا مقدمہ شروع کیا تھا۔ ان پر الزام تھا کہ 2007ء میں دستور کی معطلی کے ذریعہ ملک سے غداری کی گئی ہے۔ چیف جسٹس انور جمالی کی زیرقیادت پانچ رکنی سپریم کورٹ بنچ نے مشرف کو بیرونی سفر کی اجازت سے متعلق سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کو جائز قرار دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT