Wednesday , January 17 2018
Home / پاکستان / مشرف کے سفر پر عائد امتناع کی برخواستگی کی حکومت کی جانب سے مخالفت

مشرف کے سفر پر عائد امتناع کی برخواستگی کی حکومت کی جانب سے مخالفت

کراچی 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام) حکومت پاکستان نے سابق فوجی حکمراں جنرل پرویز مشرف کی داخل کردہ درخواست جس میں خواہش کی گئی تھی کہ ان کے سفر پر عائد امتناع برخواست کردیا جائے تا کہ وہ دبئی میں اپنی علیل والدہ کی عیادت کرسکیں، مخالفت کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کی دو رکنی بنچ سے کہا کہ بعض مقدمات میں مشرف کو سزائے موت کا بھی سامنا ہے اور وہ اپن

کراچی 6 مئی (سیاست ڈاٹ کام) حکومت پاکستان نے سابق فوجی حکمراں جنرل پرویز مشرف کی داخل کردہ درخواست جس میں خواہش کی گئی تھی کہ ان کے سفر پر عائد امتناع برخواست کردیا جائے تا کہ وہ دبئی میں اپنی علیل والدہ کی عیادت کرسکیں، مخالفت کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کی دو رکنی بنچ سے کہا کہ بعض مقدمات میں مشرف کو سزائے موت کا بھی سامنا ہے اور وہ اپنی والدہ کی عیادت کے بہانے فرار ہوسکتے ہیں۔ مشرف کے وکیل فرخ نسیم نے کہا کہ حکومت نے مشرف کے سفر پر عائد امتناع برخواست کرنے کی مخالفت کی ہے ۔

23اپریل کو سندھ ہائی کورٹ نے حکومت سے وضاحت طلب کی تھی کہ اس نے مشرف کو بیرون ملک سفر کرنے سے منع کیوں کیا ہے ۔ جسٹس محمد علی مظہر اور جسٹس شاہنواز طارق پر مشتمل بنچ نے اٹارنی جنرل آف پاکستان سلمان اسلم بٹ کو 7 مئی تک مرکزی عہدیداروں کا جواب پیش کرنے کی ہدایت دی تھی۔ مشرف کا نام گذشتہ ایک سال سے بیرون ملک سفر پر امتناع کی فہرست میں شامل ہیں۔وہ تمام مقدمات کی پیشیوں میں حاضر ہوتے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT