Monday , June 25 2018
Home / Top Stories / مشرقی غوطہ 3 حصوں میں تقسیم ، شامی افواج پیشرفت میں کامیاب

مشرقی غوطہ 3 حصوں میں تقسیم ، شامی افواج پیشرفت میں کامیاب

باغی گروپ کو شدید دھکہ ، غوطہ کے سب سے بڑے شہر دوما کے راستے منقطع، امداد کی تقسیم میں رکاوٹیں
دوما ۔ 10 ۔ مارچ : ( سیاست ڈاٹ کام): شام کی فوج نے آج مشرقی غوطہ کو 3 حصوں میں تقسیم کردیا ۔ باغی گروپ سے یہ علاقہ اپنے کنٹرول میں لینے کے لیے کی جارہی کارروائیوں میں بشار الاسد حکومت کی فوج کی پیشرفت میں کامیابی ملی ہے ۔ دمشق کے قریب باغی گروپ کے آخری ٹھکانے کی جنگجوں نے زبردست مزاحمت کے ساتھ مدافعتی موقف اختیار کیا لیکن باغی گروپ کو اس وقت شدید دھکہ پہونچا جب شام کی فوج نے اپنے اتحادی فوجی دستوں کے ساز باغی گروپ کے اصل مضبوط گڑھ پر دوبارہ قبضہ کرلیا ۔ 18 فروری کو شروع کردہ حملوں میں اب تک 1000 سے زائد معصوم شہری ہلاک ہوئے ہیں ۔ اس کارروائی کے خلاف عالمی سطح پر بشار الاسد حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ شام کے مبصرین برائے انسانی حقوق کا کہنا ہے کہ مشرقی غوطہ میں شامی فورس نے غوطہ کے سب سے بڑے شہر دوما کے راستوں کو منقطع کردیا ہے ۔ فوج کو اس کارروائی میں زبردست پیش قدمی ہوئی ہے اور یہ علاقہ 3 حصوں میں تقسیم کردیا گیا ہے ۔ شام کے دارالحکومت دمشق کے پاس مشرقی علاقہ غوط کا شمار ان چند علاقوں میں ہوتا ہے جہاں باغیوں کی اکثریت ہے یہاں 2013 سے شام کی فوج کا محاصرہ ہے ۔ شام کی فوج نے اب اس علاقہ کے نصف حصہ کو اپنے کنٹرول میں لے لیا ہے ۔ جنگجوؤں کو ملنے والی حمایت اور رسد کے نیٹ ورک کو بھی ختم کردیا گیا ہے ۔ اس علاقہ میں اب بھی 4 لاکھ افراد پھنسے ہوئے ہیں ۔ ان افراد تک امداد پہونچانے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ کل ہی اقوام متحدہ کے ایک امدادی قافلہ کے یہاں پہونچنے کے بعد بمباری کی گئی اس سے پہلے بھی یہ قافلہ متعدد بار بمباری کا شکار ہوا ہے ۔ اس کی وجہ سے متاثرین تک امداد نہیں پارہی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT