Sunday , November 18 2018
Home / دنیا / مشمولیاتی ترقی کے اشاریہ میں ہندوستان کو 62 واں مقام

مشمولیاتی ترقی کے اشاریہ میں ہندوستان کو 62 واں مقام

اقتصادی فورم کے اشاریہ میں چین اور پاکستان بہتر
ڈاؤس ۔ 22 جنوری ۔(سیاست ڈاٹ کام) اُبھرتی ہوئی معیشتوں کے مابین مشمولیاتی ترقی کے اشاریہ میں ہندوستان کو 62 واں مقام حاصل ہوا ہے جو 26 ویں مقام پر موجود چین اور 47 ویں مقام پر موجود پاکستان سے بہت نیچے ہے ۔ ناروے بدستور دنیا کی سب سے زیادہ مشمولیاتی ترقیاتی یافتہ معیشتوں میں پہلے مقام پر رہا ۔ جبکہ لتھوینیا ابھرتی ہوئی معیشوں میں سرفہرست رہا ۔ عالمی اقتصادی فورم نے اپنے سالانہ اجلاس کے آغاز سے قبل جاری کردہ سالانہ اشاریہ میں یہ اعلان کیا ۔ اس اجلاس میں وزیراعظم نریندر مودی کے علاوہ امریکہ کے صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے علاوہ دنیا بھر کے کئی عالمی قائدین شرکت کررہے ہیں۔ اس اشاریہ میں ماحولیاتی استحکام ، مستقبل کی نسلوں کو مزید قرض سے بچانا اور معیار زندگی کو ملحوظ رکھا جاتا ہے ۔ اس نے عالمی قائدین پر زور دیا ہے کہ وہ مشمولیاتی ترقیاتی کے ایک نئے ضابطہ کو فی الفور آگے بڑھائیں اور کہا کہ اقتصادی ترقی کے طورپر مجموعی گھریلو پیداوار پر انحصار قلیل مدتی عمل اور عدم مساوات کو فروغ ملتا ہے ۔ 79 ترقی پذیر معیشتوں میں گزشتہ سال ہندوستان کو 60 واں مقام حاصل تھا جبکہ چین کو 15واں اور پاکستان کو 52 واں مقام حاصل تھا ۔ 2018 ء کااشاریہ جو ترقی ، مشمولیات اور بین نسلی مساوات جیسے تین افرادی بنیادوں پر 103 معیشتوں کی ترقی کی پیمائش کرتا ہے جس کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے ۔ پہلے حصہ میں 29معیشتیں اور دوسرے میں 74 اُبھرتی ہوئی معیشتیں شامل ہیں۔

TOPPOPULARRECENT