Tuesday , April 24 2018
Home / اضلاع کی خبریں / مشن کاکتیہ کے کاموں میں عہدیداروں کی چاندی

مشن کاکتیہ کے کاموں میں عہدیداروں کی چاندی

ظہیرآباد میں تلگودیشم قائد وائی نروتم کی پریس کانفرنس
کوہیر /17 نومبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) مسٹر وائی نروتم انچارج تلگودیشم پارٹی حلقہ اسمبلی ظہیرآباد نے کوہیر منڈل کے موضع کویمی چوراستہ پر منعقدہ ایک پریس کانفرنس کو مخاطب کرتے ہوئے کیا ۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی زیر قیادت تلنگانہ حکومت سرکاری خزانہ کو دیمیک کی طرح چاٹ جارہی ہے ۔ مشن بھگیرتا مشن کاکتیہ کے کاموں سے سرکاری عہدیدار اور گتہ داروں کی چاندی ہے ۔ چیف منسٹر کے چندرا شیکھر راؤ نے کئی مرتبہ اعلان کیا ہے کہ وہ 3 سالوں میں گھر گھر نل کے ذریعہ عوام کو پانی نہ پلائیں تو وہ عوام سے ووٹ مانگنے نہیں آئیں گے ۔ آج حلقہ اسمبلی ظہیرآباد کے تقریباً مواضعات میں صرف ضابطہ کی کارروائی کرتے ہوئے کرورہا روپئے خرچ کئے جارہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ کوہیر منڈل میں 1970 کروڑ روپئے خرچ کئے جارہے ہیں ۔ عوام کے پیسوں کو غلط پالیسیوں کی وجہ سے تباہ برباد کیا جارہا ہے اور اس طرح پیسے کو رائیگاں کیا جارہا ہے جو گتہ دار کام کئے ہیں ان کو اب بلس وصول نہیں ہوئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پائیپوں کیلئے جو کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہے اس میں تمام ٹی آر ایس پارٹی اراکین کو شامل کیا گیا ہے ۔ اراضیات کے سروے میں صرف عہدیداروں کو مصروف رکھا گیا ہے ۔ دور مقامات پر رہنے والے کسان پریشان حال نہیں ان کی فریاد سننے والا کوئی نہیں ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ حلقہ اسمبلی ظہیرآباد میں تقریباً 29 ہزار ایک اراضی پر کپاس کی فصل اگائی جارہی ہے ۔ جس کیلئے بازار میں کوئی قیمت نہیں آرہی ہے ۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ فی کنٹل کپاس کی قیمت 6500 سے ادا کیا جائے تاکہ کسانوں کا کچھ بھلا ہوسکے ۔

TOPPOPULARRECENT