Monday , June 18 2018
Home / عرب دنیا / مصرمیں حملہ کی ذمہ داری دولت اسلامیہ نے قبول کرلی

مصرمیں حملہ کی ذمہ داری دولت اسلامیہ نے قبول کرلی

قاہرہ۔17مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک دہشت گرد تنظیم نے جس کا اتحاد خوفناک عسکریت پسند گروپ دولت اسلامیہ سے ہے مصرمیں حملہ کی ذمہ داری قبول کرچکا ہے جس میں تین ججس اور ایک ڈرائیور کو دھماکو صورتحال والے شمالی صوبہ سینائی میں حملہ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے ۔ یہ سینائی میں اپنی نوعیت کا اولین حملہ تھا ۔ جس میں اس گاڑی کو نشانہ بنایا گیا جس میں

قاہرہ۔17مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) ایک دہشت گرد تنظیم نے جس کا اتحاد خوفناک عسکریت پسند گروپ دولت اسلامیہ سے ہے مصرمیں حملہ کی ذمہ داری قبول کرچکا ہے جس میں تین ججس اور ایک ڈرائیور کو دھماکو صورتحال والے شمالی صوبہ سینائی میں حملہ کر کے ہلاک کردیا گیا ہے ۔ یہ سینائی میں اپنی نوعیت کا اولین حملہ تھا ۔ جس میں اس گاڑی کو نشانہ بنایا گیا جس میں ججس اسلامیہ سے العریش کی عدالت جارہے تھے تاکہ ایک مقدمہ کی سماعت کرسکیں ۔ گولی ماردینے کے چند گھنٹے قبل قاہرہ کی عدالت نے معزول صدر محمد مُرسی اور دیگر 100اسلام پسندوں کو سزائے موت سنائی تھی کیونکہ وہ 2011ء کی بغاوت کے دوران جیل توڑ کر فرار ہوگئے تھے ۔ عسکریت پسند زبردستی اُس بس میں گھس گئے جس میں کئی جج سفر کررہے تھے ۔ اس واقعہ میں دو افراد زخمی بھی ہوئے ۔ انصاربیت المقدس نے اپنا نام تبدیل کر کے صوبہ سینائی کی دولت اسلامیہ عسکریت پسند تنظیم رکھ لیا ہے ۔ یہ تنظیم قبل ازیں فوج پر کئی حملوں کی ذمہ داری قبول کرچکی ہے۔
سینائی کے جزیرہ نما میں کئی پُرتشدد حملے جنوری 2011ء کے انقلاب سے اب تک کئے جاچکے ہیں ۔اس انقلاب میںصدر حسنی مبارک کو اقتدار سے بے دخل کردیا گیا تھا ۔ تازہ ترین حملہ پولیس اور فوج کو نشانہ بناکر کیا گیاتھا ۔ اب تک محمد مُرسی کی اقتدار سے بیدخلی کے بعد 500سے زیادہ فوجی اور ملازمین پولیس ایسے حملوں میں ہلاک ہوچکے ہیں اس علاقہ میں فوج نے تلاشی مہم شروع کررکھی ہے۔

TOPPOPULARRECENT