Wednesday , December 13 2017
Home / عرب دنیا / مصر میں سینکڑوں افراد غائب : ایمنسٹی انٹرنیشنل

مصر میں سینکڑوں افراد غائب : ایمنسٹی انٹرنیشنل

قاہرہ۔ 13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) انسانی حقوق کی تنظیم ایمنیسٹی انٹرنیشنل کا کہنا ہے کہ مصر کے سکیورٹی اداروں نے گذشتہ برسوں کے دوران اختلاف رائے سے نمٹنے کیلئے سینکڑوں افراد کو غائب کیا ہے اور ان پر تشدد کیا گیا ہے۔تنظیم کی تازہ رپورٹ کے مطابق ’طلبہ، سیاسی کارکن اور مظاہرین جن میں بعض کی عمر تقریباً14 سال ہے، اچانک بنا کسی سراغ کے غائب ہو گئے۔‘ان میں سے زیادہ تر سے متعلق کہا جاتا ہے کہ انھیں مبینہ طور پر ایک مہینے کیلئے حراست میں رکھا گیا اور اس دوران ان کے ہاتھ باندھے گئے اور آنکھوں پر پٹیاں باندھی گئیں۔مصر کی حکومت نے ان جبری گمشدگیوں اور تشدد کے الزامات کو مسترد کیا ہے۔وزیر داخلہ ماجدی عبدالغفار نے کہا ہے کہ سکیورٹی ادارے مصری قوانین کے اندر رہتے ہوئے کارروائی کرتے ہیں۔واضح رہے کہ محمد مرسی کی 2013 ء میں صدارت سے برطرفی کے بعد سے سکیورٹی اداروں نے اب تک ایک ہزار سے زائد افراد کو ہلاک اور 40 ہزار کو قید کیا ہے۔ایمنیسٹی انٹرنیشنل کے مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ کے ڈائریکٹر فلپ لوتھر کا کہنا ہے کہ عبدالفتح السیسی اور عبدالغفار کے ماہ ِمارچ میں اقتدار سنبھالنے کے بعد سے ’جبری گمشدگیاں ریاست کی پالیسی کا اہم حصہ بن چکی ہیں۔‘ تنظیم نے کہا کہ ’روزانہ اوسطاً تین سے چار افراد کو نیشنل سکیورٹی ایجنسی کی قیادت میں اسلحے سے لیس سکیورٹی فورسز کے اہلکار گھروں میں گھس کر حراست میں لیتے ہیں۔‘قاہرہ میں وزارت داخلہ کے ہیڈکوارٹر کے اندر نیشنل سکیورٹی ایجنسی کے دفاتر میں سینکڑوں افراد کو قید رکھا جاتا ہے۔ فلپ لوتھر کا کہنا ہے کہ اس رپورٹ سے سکیورٹی اداروں اور عدلیہ کے حکام کے درمیان خفیہ سازشوں پر سے پردہ اٹھ گیا ہے۔

 

روسی بمباری میں 15 شامی ہلاک
طرابلس ۔ 13 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) شام میں مقامی کارکنان کے مطابق روسی طیاروں نے منگل کی شام اردن کی سرحد کے قریب میدانی علاقے بادیہ الحماد میں قتل و غارت کا بازار گرم کر دیا جس خواتین اور بچوں سمیت درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوئے۔ کارکنان نے بتایا کہ روسی طیاروں نے بے گھر افراد کے کیمپ کو سات سے زیادہ فضائی حملوں کا نشانہ بنایا جن میں کلسٹر راکٹوں کا استعمال شامل ہے۔

TOPPOPULARRECENT