Friday , May 25 2018
Home / شہر کی خبریں / مصطفی فائرنگ کے ملزمین عدالت سے رجوع

مصطفی فائرنگ کے ملزمین عدالت سے رجوع

رنگاریڈی ڈسٹرکٹ کورٹ میں درخواست ضمانت قبل از گرفتاری داخل ، پیر کو سماعت َ
حیدرآباد ۔ /17 نومبر (سیاست نیوز) میلاردیوپلی میں رئیل اسٹیٹ تاجر مصطفی پر قاتلانہ حملہ فائرنگ کیس کے ملزمین جو اب تک سائبر آباد پولیس کو چکمہ دے کر قانون کی گرفت سے باہر رہنے میں کامیاب ہیں ، آج رنگاریڈی ڈسٹرکٹ کورٹ میں ضمانت قبل از گرفتاری کی ایک درخواست داخل کرتے ہوئے تحقیقاتی عہدیداروں کو حیرت زدہ کردیا ۔ پولیس کے عہدیداروں کو شبہ ہے کہ سیاسی سرپرستی کے نتیجہ میں ملزمین اب تک پولیس کے چنگل سے بچنے میں کامیاب رہے ہیں اور اب قانون کی مدد حاصل کرتے ہوئے خود کو اس سنسنی خیز واقعہ میں راحت حاصل کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔یہ بات قابل غور ہے کہ ملزمین نے ماہرین قانون کی مدد سے زخمی مصطفی دواخانہ سے ڈسچارج ہونے کے بعد عدالت میں یہ درخواست داخل کی ہے ۔ زبیر اور اس کے 5 ساتھیوں بشمول پرویز کو پولیس کی خصوصی ٹیمیں گزشتہ ایک ہفتہ سے کرناٹک اور مہاراشٹرا میں گرفتار کرنے کیلئے کئی مقامات پر دھاوے کرچکی ہے لیکن پولیس کو ناکامی ہاتھ لگی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ زبیر اور اس کے 5 ساتھی ایک ہی مقام پر روپوش ہے تاکہ کسی بھی ایک ملزم پولیس کے ہاتھوں لگنے سے انہیں کئی مسائل کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ ملزمین نے رنگاریڈی ڈسٹرکٹ کورٹ کے سیشن جج کے اجلاس پر آج درخواست قبل از گرفتاری کی ایک درخواست داخل کی ہے جس کے نتیجہ میں عدالت نے استغاثہ کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اس سلسلے میں جواب طلب کیا ہے ۔ عدالت نے اس درخواست کی سماعت /20 نومبر کو مقرر کی ہے ۔ واضح رہے کہ میلاردیوپلی پولیس اسٹیشن کے سب انسپکٹر جی راجیش کی جانب سے زبیر کے خلاف ایک شکایت درج کئے جانے پر پولیس نے تعزیرات ہند کے دفعہ 307 (اقدام قتل) اور انڈین آرمس ایکٹ کے دفعہ 25 اور 27 کے تحت ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کیا تھا ۔ اس ضمن میں تحقیقاتی عہدیداروں نے کیس کے اہم ملزم زبیر خاں کے کال ڈاٹا ریکارڈس حاصل کئے تھے جس میں شاستری پورم کے مجلسی کارپوریٹر مصباح الدین کا فون نمبر دستیاب ہوا اور اس بنیاد پر پولیس نے کارپوریٹر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 7 گھنٹوں تک پوچھ تاچھ کی تھی ۔ بتایا جاتا ہے کہ پولیس کی جانب سے بنجارہ ہلز کے ورینچی ہاسپٹل کے سی سی ٹی وی فوٹیج نے کارپوریٹر کی موجودگی کے علاوہ تمام ملزمین کی جانب سے زخمی مصطفی کو دواخانہ میں شریک کرکے مرسیڈیز گاڑی میں فرار ہونے کے شواہد حاصل ہوئے ہیں ۔ ایسے وقت میں جب سائبر آباد پولیس ملزمین کی گرفتاری کیلئے کئی ٹیمیں تشکیل دیتے ہوئے انہیں گرفتار کرنے کیلئے ہرممکن کوشش کررہی ہے ، ملزمین کی جانب سے اچانک عدالت میں درخواست ضمانت قبل از گرفتاری داخل کرنے کے نتیجہ میں تحقیقاتی عہدیدار حیرت زدہ ہوگئے ہیں ۔ پولیس اس درخواست کی مخالفت کرے گی ۔

 

TOPPOPULARRECENT