Thursday , May 24 2018
Home / شہر کی خبریں / مصطفی پر فائرنگ کا معمہ ہنوز حل طلب

مصطفی پر فائرنگ کا معمہ ہنوز حل طلب

زبیر خان اور دیگر 5 ساتھی پولیس گرفت سے باہر ، خودسپردگی کا امکان
حیدرآباد ۔ /16 نومبر (سیاست نیوز) شہر کے شاستری پورم علاقہ میں تاجر مصطفی پر فائرنگ ہوئے ایک ہفتہ گزرچکا ہے لیکن پولیس ہنوز اس معمہ کو حل نہیں کرپائی ۔ بتایا جاتا ہے کہ مشتبہ حملہ آور زبیر خاں اور اس کے 5 ساتھی پولیس کی گرفت میں نہیں آسکے اور انہیں گرفتار کرنے کیلئے خصوصی پولیس ٹیم ابھی مہاراشٹرا میں موجود ہے ۔ باور کیا جارہا ہے کہ ماہرین قانون اور سیاسی سرپرستی کی مدد سے ملزمین عنقریب خودسپردگی اختیار کریں گے ۔ اس دوران 33 سالہ مصطفی فائرنگ واقعہ نے اس وقت ایک نیا موڑ اختیار کرگیا جب زخمی شخص نے یہ دعویٰ کیا تھا کہ حادثاتی طور پر خود اس نے گولی چلالی تھی ۔ سب انسپکٹر پولیس میلاردیوپلی پولیس اسٹیشن مسٹر جی راجیش جو فائرنگ واقعہ کیس میں درخواست گزار ہے نے ورنچی ہاسپٹل کے ڈاکٹرس کو یہی بتایا تھا کہ حادثاتی طور پر گولی چل جانے سے مصطفیٰ زخمی ہوا ہے ۔ لیکن پولیس نے جب معاملے کی جانچ کی تو ایسا کوئی ثبوت دستیاب نہ ہوسکا جو اس کے دعویٰ کی توثیق کرسکے ۔ پولیس کے سراغ رسانی دستہ (کلوز ٹیم) کی جانب سے کئے گئے جی ایس آر تجزیہ میں یہ صاف ظاہر ہوا ہے کہ گولی حادثاتی طور پر نہیں چلائی گئی اور خود مصطفی کے ہاتھوں گولی چلنے کا واقعہ پیش نہیں آیا بلکہ کسی اور نے اس پر فائرنگ کی ۔ چنانچہ پولیس اقدام قتل کے پہلو سے اس مقدمہ کی تحقیقات کررہی ہے اور مزید شواہد اکٹھا کرنے میں مصروف ہے ۔ اس کے ساتھ ساتھ پولیس نے مجسٹریٹ کے روبرو مصطفٰی خان کا بیان بھی قلمبند کروایا ہے ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ زخمی شخص نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ فائرنگ کا واقعہ کنگس کالونی میں واقع اس کی رہائش گاہ پر پیش آیا ۔ لیکن تحقیقاتی ٹیم کو یہاں کوئی ثبوت دستیاب نہیں ہوا اورکنگس کالونی اویسی ہلز میں موجود مشتبہ ملزم کے گھر پر سی سی ٹی وی نیٹ ورک اچانک غائب ہونے سے بھی کئی شبہات ابھررہے ہیں ۔ فائرنگ کا واقعہ ہوئے ایک ہفتہ ہوا جارہا ہے ۔ لیکن اس کیس کے اہم ملزم زبیر خاں اور دیگر ملزمین پولیس کو چکمہ دینے میں کامیاب ہورہے ہیں ۔ پولیس کو سخت شبہ ہے کہ زبیر خاں اور اس کے ساتھی مہاراشٹرا میں روپوش ہیں اور تمام ملزمین کو پولیس کی گرفت سے باہر رکھا جارہا ہے تاکہ ایک بھی ملزم کو حراست میں لئے جانے پر فائرنگ کا معمہ حل ہوسکتا ہے ۔ اسی دوران بتایا جاتا ہے کہ زخمی مصطفی کو دواخانہ سے ڈسچارج کردیا گیا ہے۔ پولیس کو شبہ ہے کہ زبیر خان اور مصطفی کے درمیان آپسی مخاصمت کے سبب فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ۔ جبکہ یہ اطلاع بھی ہے کہ حالیہ دنوں پرانے شہر میں انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ کی جانب سے کئے گئے دھاوؤں کی مصطفی ہی نے خفیہ اطلاعات فراہم کی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT