Tuesday , December 18 2018

مظفر نگر اجتماعی عصمت ریزی مقدمہ متاثرہ خاتون کا بیان قلمبند

مظفر ۔ 4 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) مظفر نگر فسادات کے دوران دیہات پھوگنا میں اجتماعی عصمت ریزی کی متاثرہ خاتون کا بیان عدالت میں قلمبند کیا گیا۔ عہدیداروں کے بموجب متاثرہ نے کہا کہ 5 افراد نے اس کی عصمت ریزی کی تھی۔استغاثہ نے مطالبہ کیا کہ خاطیوں کو جلد از جلد سزا دی جائے۔ چیف جوڈیشنل مجسٹریٹ نریندر کمار نے قبل ازیں ایس آئی ٹی کی مقدمہ ب

مظفر ۔ 4 ۔ فروری (سیاست ڈاٹ کام) مظفر نگر فسادات کے دوران دیہات پھوگنا میں اجتماعی عصمت ریزی کی متاثرہ خاتون کا بیان عدالت میں قلمبند کیا گیا۔ عہدیداروں کے بموجب متاثرہ نے کہا کہ 5 افراد نے اس کی عصمت ریزی کی تھی۔استغاثہ نے مطالبہ کیا کہ خاطیوں کو جلد از جلد سزا دی جائے۔ چیف جوڈیشنل مجسٹریٹ نریندر کمار نے قبل ازیں ایس آئی ٹی کی مقدمہ بند کردینے کی رپورٹ مسترد کردی تھی۔ اس رپورٹ میں 2013 ء کے مظفر نگر فسادات کے دوران خاتون کی عصمت ریزی کرنے والے پانچ خاطیوں کو بے قصور قرار دیا گیا تھا ۔ مجسٹریٹ نریندر کمار نے مقدمہ کا دوبارہ آغاز کیا جبکہ ایس آئی ٹی نے ثبوتوں کے فقدان کی بناء پر مقدمہ بند کردینے کی درخواست کی تھی۔ عدالت نے آج 30 سالہ خاتون کا بیان قلمبند کیا۔ اجتماعی عصمت ریزی مقدمات میں جملہ 7 مقدمات ہیں، جن میں سے 6 پھوگنا دیہات اور ایک لینک دیہات کا ہے ۔ یہ مقدمے 27 افراد کے خلاف درج کئے گئے ہیں۔ایس آئی ٹی نے 25 افراد کو خاطی قرار دیا۔

TOPPOPULARRECENT