مظفر نگر فسادات تحقیقاتی کمیشن میعاد میں توسیع کا خواہاں

مظفر نگر ۔ 10 ۔ نومبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : مظفر نگر فسادات پر حکومت اترپردیش کی جانب سے مقرر کئے گئے تحقیقاتی کمیشن کی میعاد عنقریب ختم ہونے والی ہے ۔ جس پر کمیشن نے میعاد میں توسیع کا مطالبہ کیا ہے ۔ یاد رہے کہ تحقیقاتی کمیشن فرد واحد پر مشتمل ہے جو الہ آباد ہائی کورٹ کے ریٹائرڈ جج وشنو سہائے ہیں ۔ کمیشن کی تشکیل گزشتہ سال 9 ستمبر کو کی گئی تھی ۔ قبل ازیں بھی اس کمیشن کو دوبارہ چھ چھ ماہ کے لیے توسیع دی جاچکی ہے جو کل اختتام پذیر ہوگئی ۔ کمیشن ذرائع کے مطابق میعاد میں مزید توسیع کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔ جس کے لیے کمیشن کا ایک اجلاس 26 نومبر کو مقرر ہے ۔ دریں اثناء ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کونسل راج شرما نے بتایا کہ حکام کو اب تک کمیشن کی توسیع کے متعلق کوئی اعلامیہ موصول نہیں ہوا ہے ۔ ریاستی حکومت نے کمیشن سے خواہش کی تھی کہ وہ 27 اگست 2013 کو شروع ہوئے تشدد کی تحقیقات سے آغاز کرے اور اندرون دو ماہ اپنی رپورٹ پیش کرے تاہم بعد ازاں رپورٹ پیش کرنے کی مدت میں توسیع کردی گئی تھی ۔ کمیشن کو یہ بھی ہدایت کی گئی تھی کہ وہ مظفر نگر فسادات کے دوران انتظامیہ کی جانب سے کسی ممکنہ کوتاہی کی بھی تحقیقات کرے جس میں 60 افراد ہلاک اور ہزاروں بے گھر ہوگئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT