مظفر نگر فسادات کے 7 ماہ بعد ملائم سنگھ کا پہلا دورہ

مظفر نگر ۔ /6 اپریل ۔ (سیاست ڈاٹ کام) مظفر نگر فسادات کے 7 ماہ بعد آج پہلی مرتبہ سماج وادی پارٹی سربراہ ملائم سنگھ یادو نے یہاں کا دورہ کیا ۔ انہوں نے مسلمانوں سے ملاقات کی اور دعویٰ کیا کہ متاثرین کو 115 کروڑ روپئے کی امداد دی گئی جبکہ گجرات میں نریندر مودی نے 2002 ء فر قہ وارانہ فسادات کے متاثرین کیلئے 1 روپیہ بھی خرچ نہیں کیا تھا ۔ انہوں نے مغربی اترپردیش کے ضلع میں انتخابی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے جہاں /10 اپریل کو رائے دہی مقرر ہے

‘ کہا کہ انتخابات میں پھر ایک بار کوئی بھی جماعت اکثریت حاصل نہیں کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ تیسرا محاذ حکومت تشکیل دے گا اور سماج وادی پارٹی سب سے بڑی جماعت کے طور پر ابھرے گی ۔ فرقہ وارانہ فسادات سے نمٹنے کے معاملے میں سماج وادی پارٹی حکومت پر تنقیدوں کے پس منظر میں ملائم سنگھ یادو نے یہ دعویٰ کیا کہ انتظامیہ نے تشدد پر اندرون دو دن کامیابی کے ساتھ قابو پالیا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے متاثرین کو 115 کروڑ روپئے کی امداد فراہم کی اور اس قدر بڑی رقم ملک میں کبھی بھی فسادات کے متاثرین میں ریلیف کے طور پر تقسیم نہیں کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ نریندر مودی کی زیرقیادت گجرات حکومت نے متاثرین کو ایک روپیہ بھی نہیں دیا ۔

TOPPOPULARRECENT